لبنان:ٹرائبیونل نے حزب اللہ اورامل کے5 ارکان کو یواین فوجی کے قتل کا قصوروارٹھہرا دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

لبنان میں ایک فوجی ٹرائبیونل نے حزب اللہ اور امل تحریک کے پانچ ارکان پر باضابطہ طور پر 2022 میں اقوام متحدہ کی امن فوج (یونیفیل) میں شامل ایک آئرش اہلکار کو قتل کرنے کا الزام عاید کیا ہے۔

23سالہ شان رونی 15 دسمبر2022ء کو لبنان میں اقوام متحدہ کے امن دستوں پر مہلک حملے میں ہلاک ہوگئے تھے۔2015ء کے بعد لبنان میں اقوام متحدہ کے امن دستوں پریہ پہلا مہلک حملہ تھا۔

عدالتی ذرائع نے بتایا کہ فوجی ٹرائبیونل کے جج نے پانچ افراد پر مجرمانہ فعل کے ارتکاب کا الزام عاید کیا ہے جس کی وجہ سے شان رونی کی جان چلی گئی تھی اور تین دیگر فوجیوں کے قتل کی کوشش کی گئی تھی۔

ان پانچ ملزمان میں سے ایک شخص زیرحراست ہے جبکہ چار ابھی تک مفرور ہیں۔

لبنانی عدلیہ جنوری ہی میں ان پانچ افراد سمیت سات افراد پر فردِ الزام عاید کر چکی ہے لیکن اس نئے الزام میں ان کی شناخت شیعہ ملیشیا حزب اللہ اور امل تحریک کے ارکان کے طور پر کی گئی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں