سعودی عرب: سکول میں "کرنٹ" لگنے سے ہسپتال داخل طالب علم چل بسا

جازان میں ابو عریش کے ایک سکول کے ایئر کنڈیشنر کا شکار ہونے والے طالب علم سطام غازی فقیہ کے بھائی نے آج صبح ان کی موت سے آگاہ کیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب کے ایک سکول میں "کرنٹ" لگنے سے طالب علم جاں بحق ہوگیا۔ جازان کے علاقے ابو عریش میں اتوار کو ایک سکول میں سطام غازی فقیہ سکول کے ایئرکنڈیشنر کا شکار ہوا۔ سطام غازی فقیہ کے بھائی نے اس کی موت کی تصدیق کردی۔ انہوں نے کہا آج صبح سطام کا دل بند ہونے کے بعد ڈاکٹروں کی طرف سے اسے بچانے کی تمام کوششیں ناکام ہو گئی تھیں۔ وہ 15 دن پہلے حادثے کے فوراً بعد کوما میں چلا گیا تھا۔

ادھر صحافی قاسم الخبرانی نے بھی "ٹویٹر" پر اپنے اکاؤنٹ کے ذریعے ایک ٹویٹ میں کہا کہ طالب علم سطام غازی فقیہ کی آج وفات ہوگئی۔ ہم ان کے اہل خانہ سے تعزیت کرتے ہیں۔ انا للہ و انا الیہ راجعون۔

واضح رہے سطام غازی فقیہ نامی طالب علم کو 3 ہفتے قبل جازان کے ابو عریش کے ایک مڈل سکول میں اس وقت کرنٹ لگ گیا تھا جب اس نے سکول میں ایئر کنڈیشنر کو چھو لیا تھا۔

جازان ریجن کے ڈائریکٹر جنرل آف ایجوکیشن ملھی عقدی نے طالب علم کو الیکٹرک شارٹ سرکٹ کے باعث کرنٹ لگنے کے بعد متعدد جرمانے عائد کیے تھے۔ غفلت کے مرتکب تمام افراد کو جرمانہ ادا کرنے کی سزائیں سنائی گئی تھیں۔ ان میں سے بہت سے لوگوں کو دیگر سزائیں بھی دی گئی تھیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں