شہری کو زندہ جلانے والے سعودی کو موت کی سزا سنا دی گئی

سعودی شہری بركات بن جبريل بن بركات العاطفی الكناني نے سعودی شہریت کے حامل بندر بن طه بن محمد القرهدی کو قتل کیا تھا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی وزارت داخلہ نے مکہ مکرمہ کے علاقے میں مجرموں میں سے ایک کے لیے سزائے موت کے نفاذ کے حوالے سے ایک بیان جاری کیا۔

بیان میں کہا گیا کہ سعودی شہری بركات بن جبريل بن بركات العاطفی الكناني نے سعودی شہریت کے حامل بندر بن طه بن محمد القرهدی کو قتل کردیا تھا۔ برکات نے بندر بن طہ پر پٹرول ڈال کر اسے آگ لگا دی اور آگ سے جھلسنے کے بعد بندر بن طہ کی موت ہوگئی۔ آگ سے چار کاریں جل گئیں ۔ قاتل کی جانب سے میتھی مفیٹامائن کے غلط استعمال کا بھی انکشاف ہوا۔ سکیورٹی حکام نے قاتل برکات کو گرفتار کرلیا اور تفتیش اور عدالتی کارروائی کے بعد اس کا جرم ثابت ہوگیا۔

جرم کی بدصورتی اور گھناؤنا پن اور اس حقیقت کو دیکھتے ہوئے کہ جلا کر قتل کرنا مقتول کے لیے اذیت ہے۔ یہ بات مد نظر رکھتے ہوئے کہ مجرم نے مقتول کو جلنے دیا اور اس کی مدد نہیں کی۔ قاتل کے لیے سزائے موت تجویز کی جاتی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں