سعودی سائنسی مشن کی کامیابی کے بعد دو سعودی خلاباز وطن پہنچ گئے

ریانہ برناوی اور علی القرنی نے مائیکرو گریوٹی میں 14 اہم تحقیقی تجربات کیے جن میں سے 3 تعلیمی اور ایک تعلیمی تجربہ بھی تھا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی خلاباز ریانہ برناوی، علی قرنی، مریم فردوس اور علی الغامدی بین الاقوامی خلائی سٹیشن پر سائنسی مشن کی کامیابی کے بعد آج دارالحکومت ریاض پہنچے۔

کنگ خالد انٹرنیشنل ایئرپورٹ پر سعودی خلائی ایجنسی کے بورڈ آف ڈائریکٹرز کے چیئرمین انجینئر عبداللہ بن عامر السواحہ اور چیف آف دی جنرل سٹاف لیفٹیننٹ جنرل فیاض الرویلی کا استقبال کیا گیا۔

سعودی خلائی ایجنسی نے اعلان کیا کہ خلابازوں ریانہ برناوی اور علی القرنی کی وطن میں بحفاظت آمد انسانیت کی خدمت پر اس کے نتائج کی عکاسی کرے گی۔ اس دورے سے خلائی تحقیق اور سائنس کے میدان میں سعودی عرب کی پوزیشن بھی مضبوط ہو جائے گی۔

خلا باز ریانہ برناوی اور علی القرنی مشن مکمل کر کے سعودی عرب پہنچ گئے
خلا باز ریانہ برناوی اور علی القرنی مشن مکمل کر کے سعودی عرب پہنچ گئے

ایجنسی نے اس بات کی تصدیق کی کہ اس سائنسی سفر کے دوران حاصل کی جانے والی نمایاں سائنسی شراکت اس ملک کے لیے باعث فخر ہیں۔

یاد رہے دو سعودی خلاباز ریانہ برناوی اور علی القرنی 31 مئی کو اپنے خلائی مشن سے زمین پر واپس آئے۔ انہوں نے مائیکرو گریوٹی میں 14 اہم سائنسی تحقیقی تجربات کیے جن میں تین تعلیمی اور بیداری کے تجربات بھی شامل تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں