سعودی عرب کے ساتھ ہمارے تعلقات اعلیٰ ترین سطح پر ہیں: عراقی وزیر دفاع

خودمختاری ہماری ریڈ لائن، ہمیں ترک بمباری کے مسئلہ کا سیاسی حل درکار ہے: ثابت العباسی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

عراقی وزیر دفاع ثابت العباسی نے کہا ہے کہ ان دنوں سعودی عرب کے ساتھ عراق کے تعلقات اعلیٰ ترین سطح پر ہیں۔ ہم سیکورٹی اور انٹیلی جنس کو مربوط کر رہے ہیں۔ ثابت العباسی نے کہا خودمختاری ایک ریڈ لائن ہے۔ ہمیں ترک بمباری کے مسئلہ کا سیاسی حل درکار ہے۔

ہفتے کے روز العربیہ چینل کو خصوصی انٹرویو میں عراقی وزیر دفاع نے مزید کہا کہ انقرہ شمالی عراق میں کردستان ورکرز پارٹی (پی کے کے) کے عناصر کو نشانہ بنانے کے لیے بار بار بمباری کرتا ہے جس کی وجہ سے بعض کارروائیوں کے دوران عراقی شہریوں کی ہلاکتیں ہوتی ہیں۔ انہوں نے کہا ریاست کی مرضی اور کنٹرول سے باہر نکل کر ہتھیاروں کی موجودگی کی اجازت نہیں دی جائے گی۔

عراقی وزیر دفاع نے کہا کہ شام میں الہول کیمپ داعش کا گڑھ بن گیا ہے۔ یہ کیمپ بغداد کے لیے بڑی تشویش کا باعث ہے۔

ہر ملک کو چاہیے کہ وہ اپنے شہریوں کو الھول کیمپ سے نکال لے تاکہ یہ کیمپ مکمل طور پر بند کیا جا سکے۔

بغداد نے حال ہی میں اس الھول کیمپ سے سینکڑوں عسکریت پسندوں کو بازیاب کر لیا ہے۔ انہوں نے کہا گزشتہ ہفتے ایک سیکیورٹی کانفرنس کی میزبانی کی گئی جس میں دنیا کے تمام ممالک پر زور دیا گیا کہ وہ کیمپ سے اپنے شہریوں کو واپس لے جائیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں