حج سیزن

صنعاء سے عازمین حج کو لے کر پہلی پرواز سعودی عرب پہنچ گئی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

یمن کے دارالحکومت صنعا سے اتوار کو پہلی پرواز 200 سے زیادہ عازمین حج کو لے کر سعودی عرب پہنچ گئی۔

یمن ایئر ویز کے طیارے میں 270 افراد سوار تھے ۔ طیارہ ہفتہ کو صنعا انٹرنیشنل ایئرپورٹ سے جدہ کے کنگ عبدالعزیز انٹرنیشنل ایئرپورٹ پر اترا۔ اس پرواز کا اعلان یمنی وزیر اطلاعات معمر العریانی نے 15 جون کو کیا تھا۔

یمن کا دارالحکومت صنعا 2014 سے ایران کی حمایت یافتہ حوثی ملیشیا کے کنٹرول میں ہے۔ 2016 میں صنعا کے ایئرپورٹ کو تجارتی پروازوں کے لیے بند کیے جانے کے بعد یہ پہلی پرواز ہے۔

سعودی عرب آمد پر یمنی عازمین نے مملکت کی طرف سے فراہم کردہ سہولیات اور ہوائی اڈے کے حکام کی جانب سے پرتپاک استقبال کے لیے اپنی تعریف کا اظہار کیا۔

سعودی عرب کی وزارت حج و عمرہ نے کہا تھا کہ اس فیصلے کی جڑیں مملکت کے مختلف حصوں سے آنے والے یمنی باشندوں کو حج کی ادائیگی کو یقینی بنانے کی خواہش پر مبنی ہیں۔ یاد رہے متوقع طور پر حج کے مناسک 26 جون سے شروع ہونے ہیں۔

اپریل 2022 میں اقوام متحدہ کی ثالثی میں جنگ بندی کے اعلان کے بعد یمن میں لڑائی کافی حد تک کم ہوگئی۔ جنگ بندی اکتوبر میں ختم ہوگئی ہے لیکن لڑائی بڑی حد تک روکی ہوئی ہے۔

امریکہ کی قومی سلامتی کونسل کے ترجمان ایڈم ہوج نے کہا ہے کہ یمن کے عوام کے لیے جنگ بندی کی گئی ہے۔

ہوج نے یمن اور سعودی عرب کے درمیان حج پروازوں کا خیرمقدم کرتے ہوئے ایک بیان میں کہا کہ تقریباً ایک دہائی قبل جنگ شروع ہونے کے بعد سے یہ سب سے پرسکون دور ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں