مسجد نبوی ﷺ میں عازمین کو گرمی سےبچانے کے 5 طریقے کون سے ہیں؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

مسجد نبوی ﷺ کے نگران ادارے نے زائرین کو گرمیوں کے دوران گرمی کی شدت سے بچانے کے لیے متعدد ذرائع تیار کیے ہیں۔

اعلی کارکردگی کا ایئر کنڈیشننگ سسٹم ان ذرائع میں سے ایک ہے جس کے مرکزی ایئر کنڈیشننگ اسٹیشن کا رقبہ 70,000 مربع میٹرپر مشتمل ہے۔ اس میں دنیا کا سب سے بڑا واٹر کولنگ کنڈینشرسسٹم شامل ہے۔ اس کے لیے جدید ترین طریقے اور ٹیکنالوجیزسے لیس 3400 ٹن ایئرکنڈیشن نصب ہیں جو چھ حصوں میں تقسیم کیے گئے ہیں۔ ایئر ٹریٹمنٹ، ڈسٹری بیوشن اور کولنگ کے لیے 151 یونٹس شامل ہیں۔

مسجد نبویﷺ میں گرمی کی شدت کو کم کرنے کے لیے استعمال ہونےوالی بڑی بڑی چھتریاں

مسجد نبوی ﷺ میں گرمی کی شدت کم کرنے کے لیے اس کے صحنوں میں 250 بڑی چھتریاں بھی نصب کی گئی ہیں جن کی اونچائی 15 میٹر اورچوڑائی 14 میٹر ہے۔ ایک چھتری کا وزن 40 ٹن ہے۔ یہ خودکار نظام کے ساتھ کام کرتی ہیں۔ ان کی مدد سے بھی مسجد نبوی کے صحنوں میں نمازیوں کی حفاظت اور سورج کی تپش سےبچنے میں مدد ملتی ہے۔ بارش کی صورت میں پھسلنے اور گرنے کے خطرات سے بچانے کے لیے اسپرے پنکھے بھی لگائے گئے ہیں۔ یہ پنکھے نمازیوں کے لیے گرمی کو کم کرنے کا کام کرتے ہیں۔ دھند صاف کرنے کے 436 پنکھے نصب ہیں۔

مسجد کے صحن میں سفید سنگ مرمر (التاسوس) لگایاگیا ہے جو مسجد نبوی کے صحنوں میں نماز کے لیے مختص مقامات کا احاطہ کرتا ہے۔یہ پتھر گرمی کنٹرول کرتا ہے۔ یہ رات کے وقت سوراخوں کے ذریعے نمی جذب کرتا ہے اور دن کے وقت یہ رات میں جذب ہونے والی نمی کو خارج کرتا ہے، جس سے یہ زیادہ درجہ حرارت کے وقت ہمیشہ ٹھنڈا رہتا ہے۔

مسجد نبوی کے امور کی ذمہ دار ایجنسی نے زمزم کے پانی کے لیے 20,000 کنٹینرز بھی مہیا کیے ہیں۔ بہت زیادہ گرمیوں میں ان کنٹینروں کی تعداد 22 ہزار تک پہنچ جاتی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں