عیلی بستی پر حملے کے بعد نیتن یاہو کا آبادکاروں کے لیے 1,000 نئے مکانات بنانے

امریکہ نے اسرائیل کو متنبہ کیا ہے کہ وہ یہودی آبادکاری کا کوئی بھی نیا منصوبہ شروع نہ کرے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

اسرائیلی وزیر اعظم بنجمن نیتن یاہو نے بدھ کے روز فیصلہ کیا کہ "عیلی" یہودی بستی میں آبادکاروں کے لیے 1,000 نئے رہائشی مکانات تعمیر کیے جائیں، جہاں منگل کو ایک تشدد کا واقعہ پیش آیا ہے۔

اسرائیلی وزیر اعظم کے دفتر نے اسے منگل کے روز وہاں پر فلسطینیوں کے مسلح حملے کا ردعمل قرار دیا جس میں 4 افراد ہلاک ہوئے۔

دفتر کے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ نیتن یاہو اور وزیر خزانہ بیزلیل سموٹریچ نے کسی ٹائم فریم کی وضاحت کیے بغیر اس منصوبے پر "فوری طور پر آگے بڑھنے پر اتفاق کیا"۔

امریکہ نے اسرائیل کو متنبہ کیا ہے کہ وہ نئے آبادکاری کے منصوبے شروع نہ کرے۔

واضح رہے کہ اسرائیلی ایمرجنسی سروسز کا کہنا ہے کہ دو فلسطینی بندوق برداروں نے منگل کو مقبوضہ مغربی کنارے میں ایک اسرائیلی بستی کے قریب فائرنگ کی جس کے نتیجے میں چار افراد ہلاک ہو گئے۔

اسرائیلی ریڈیو نے خبر دی ہے کہ، "دو حملہ آور نابلس کے قصبے عزیف سے تھے، جن میں سے ایک حملے کے مقام پر اور دوسرا طوباس کے قریب ہلاک کر دیا گیا"۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں