غرب اردن: اسرائیلی فوج کے ڈرون حملے میں تین فلسطینی شہید

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

فلسطین کے علاقے غرب اردن کے شمالی شہر جنین میں بدھ کی شام اسرائیلی فوج نے ڈرون سے ایک کار پر بمباری کی جس کے نتیجے میں کار میں موجود تین افراد شہید ہوگئے۔

نامہ نگاروں نےبتایا کہ "اسرائیلی فوج نے ایک اسرائیلی فوجی پوائنٹ پر فائرنگ کے حملے کے بعد الجلمہ چوکی کے قریب فلسطینی عسکریت پسندوں کے ایک سیل پر بمباری کی۔"

اسرائیلی میڈیا کے مطابق "کار کو نشانہ بنانے کے واقعے میں کم سے کم 3 فلسطینی مارے گئے۔"

قبل ازیں جنین میں کار کو نشانہ بنانے کے مقام کے قریب اسرائیلی فوج اور فلسطینی بندوق برداروں کے درمیان جھڑپوں کی اطلاعات سامنے آئی تھیں۔ اسرائیلی فوج نےجاں بحق ہونے والے تینوں فلسطینیوں کی لاشیں قبضے میں لے لی ہیں۔

اسرائیلی فوج کے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ اس نے "دہشت گردوں کے ایک سیل کو ختم کر دیا جس نے یہودا اور سامریہ میں اسرائیلی قصبوں کی طرف فائرنگ کی کارروائیاں کی تھیں۔"

بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ فوجی دستوں نے "شن بیٹ سے محتاط رہ نمائی کے ساتھ، ایک مشکوک کار کا پتہ لگایا جو کہ دہشت گردوں کے ایک سیل کو لے کرسفر کر رہی تھی۔ اسے جنین میں الجلمہ چوکی کے قریب ڈرون سے نشانہ بنایا گیا۔

اسرائیلی فوج نے مزید کہا کہ "سیل کی نگرانی کے بعد فوج کے ایک ڈرون نے اسے نشانہ بنایا اور اسے ختم کر دیا۔"

اسرائیلی آرمی ریڈیو کے مطابق غرب اردن میں چار یہودیوں کی ہلاکت کے بعد وزیر دفاع یوآو گیلنٹ نے کہا تھا کہ "ہم جارحانہ انداز اختیار کریں گے اور ہم فلسطینی عسکریت پسندی کےخلاف اپنے لیے دستیاب تمام ذرائع استعمال کریں گے"

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں