اردن نے شام سے آنے والا ایک ماہ میں تیسرا ڈرون مار گرایا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

اردن نے سرحد پار شام سے آنے والا ایک اور ڈرون طیارہ مار گرایا۔ ایک ماہ میں یہ اپنی نوعیت کا تیسرا واقعہ ہے۔

اردنی فوج کی طرف سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ مملکت کے مشرقی علاقے میں مسلح افواج نے سرحد پار شام سے آنے والا ایک ڈرون مار گرایا۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ یہ اپنی نوعیت کا رواں ماہ کا تیسرا واقعہ ہے۔

مسلح افواج کی جنرل کمان کے ایک سرکاری فوجی ذرائع نے کہا کہ "بارڈر گارڈ فورسز نے ملٹری سکیورٹی سروسز اور ڈرگ انفورسمنٹ ایڈمنسٹریشن کے ساتھ مل کر شامی سرزمین سے آنے والے ڈرون کا پتا چلایا جو غیرقانوی طور پر مملکت میں داخل ہوگیا۔

انہوں نے کہاکہ ڈرون کو اردن کی حدود میں لایا گیا تھا۔ فوج کا کہنا ہے کہ مار گرائے گئے ڈرون کا ملبہ مجاز حکام کو منتقل کر دیا گیا تھا۔

فوج نے زور دیا کہ افواج نے سرحدوں پر کسی بھی خطرے اور ملک کی سلامتی کو غیر مستحکم کرنے یا شہریوں کو دہشت زدہ کرنے کی کسی بھی کوشش سے سختی سے نمٹنا جاری رکھے گی۔

منشیات اور ممنوعہ اشیاء کی مقدار اکثر ان ڈرونز کے ذریعے اسمگل کی جاتی ہے اور اردنی فوج نے حال ہی میں ان میں سے بہت سے لوگوں کوپکڑنے میں کامیابی حاصل کی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں