جنین میں کشیدگی ۔۔۔ اسرائیل نے تازہ دم فوجی کمک علاقے میں بھیج دی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

مقبوضہ مغربی کنارے کے شہر جنین میں فلسطینیوں کے مہاجر کیمپ پر پیر اور اتوار کی درمیانی شب اسرائیل کے فضائی حملوں میں کم سے کم چار فلسطینی شہید ہو گئے۔

العربیہ اور الحدث کے نامہ نگاروں نے اپنے مراسلوں میں بتایا ہے کہ سوموار کی صبح اسرائیل نے مزید تازہ دم کمک جنین شہر فلسطینی مہاجرین کے کیمپوں کی جانب روانہ کر دی ہے۔

عینی شاہدین کے حوالے سے نامہ نگاروں کی رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ جنین کے قریب سھل المقیبلہ کے علاقے میں کئی ٹینک کھڑے دیکھے گیے ہیں۔

فلسطینی وزارت صحت نے اس سے قبل بتایا تھا کہ اسرائیلی بمباری کے نتیجے میں چار فلسطینی شہید ہوئے جبکہ غرب اردن اردن کے علاقے جنین میں رات گئے کی جانے والی اسرائیلی کارروائی میں کئی فلسطینی زخمی بھی ہوئے۔

ذرائع کے مطابق فضا سے داغا جانے والے میزائل سے ایک گھر مکمل طور پر تباہ ہو گیا۔

انہی ذرائع نے بتایا کہ اسرائیلی فوج نے شمالی غرب اردن میں کی جانے والی فوجی کارروائی کے جلو میں جنین مہاجر کیمپ پر اسرائیلی بمباری میں متعدد افراد شہید اور دیگر کئی شدید زخمی ہوئے۔

ادھر اسرائیلی فوج نے دعوی کیا ہے کہ وہ شہر اور مہاجر کیمپوں میں جو کچھ ہو رہا ہے اس پر کنٹرول کی مسلسل کوششیں کر رہے ہیں۔ اسرائیلی نے دعویٰ کیا کہ جس مکان کو میزائل سے نشانہ بنایا گیا ہے اسے مسلح افراد اپنے مواصلاتی اور جاسوسی مرکز کے طور پر استعمال کر رہے تھے۔

اسرائیلی بیان میں بتایا گیا ہے کہ نشانہ بنائے جانے والے گھر کو چند ایسے مطلوب افراد اپنے محفوظ ٹھکانے کے طور پر استعمال کر رہے تھے جنہوں نے گذشتہ مہینوں کے دوران علاقے میں اسرائیلی اہداف کو نشانہ بنایا تھا۔

بڑے پیمانے پر آپریشن

یاد رہے کہ شمال غرب اردن میں اسرائیلی فوج کے خلاف فلسطینیوں کی بڑھتی ہوئی کارروائی کے بعد اسرائیل نے علاقے میں بڑی کارروائی کا عندیہ ظاہر کیا تھا۔

حالیہ اسرائیلی کارروائیوں نے فلسطینیوں کے ذہنوں میں اپریل 2002 کے ہلاکت خیز محاصرے کی یاد تازہ کر دی میں اقوام متحدہ کے فراہم کردہ اعداد وشمار کے مطابق 58 فلسطینی شہید کر دیے گئے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں