سعودی وزارت تجارت کا 4,246 کاروں کو فنی خرابی کی وجہ سے واپس لانے کا حکم فیصلہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

آج منگل کے روز سعودی عرب کی وزارت تجارت کے ڈیفیکٹیو پراڈکٹس ریکال سینٹر نے 4,246 کاروں کو ان میں موجود فنی خرابی کی وجہ سے واپس منگوانے کا اعلان کیا ہے۔ یہ فنی خرابی آگ کا باعث بن سکتی ہے۔

مرکز نے کہا کہ اس نے Isuzu D-MAX 2023 گاڑیوں کو الیکٹرو ہائیڈرولک کنٹرول یونٹ (EHCU) میں پانی کے رساؤ کے امکان کی وجہ سے واپس بلانے کا فیصلہ کیا، جس سے شارٹ سرکٹ اور آگ لگنے کا خطرہ ہو سکتا ہے۔

انہوں نے وضاحت کی کہ ان گاڑیوں کا ماڈل رواں سال 2023ء کا ہے۔ وزارت تجارت نے العیسیٰ، الیمنی اور بخشب آٹوموٹیو کمپنیوں سے مفت میں ضروری مرمت کرنے کے لیے رجوع کرنے پر زور دیا ہے۔

سنٹر نے 2021 سے 20230 کے مینوفیکچرنگ سال کے لیے سائیڈ ٹو ڈور بند ہونے کے امکان کی وجہ سے کیا کارنیول کو واپس بلانے کا اعلان کیا تھا، جس سے چوٹ لگ سکتی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں