سینکڑوں خاندانوں کے جنین کیمپ سے نکلنے کی ویڈیو سامنے آگئی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اسرائیلی فوج کے جنین کے کیمپ پر حملے کے بعد جھڑپیں شروع ہونے کے بعد سینکڑوں خاندانوں کے کیمپ سے نکلنے کی ویڈیو سامنے آگئی۔ ’’ العربیہ‘‘ کے کیمروں نے لوگوں کے نکلنے کے مناظر کو محفوظ کر کرلیا۔ فلسطینی ہلال احمر نے اعلان کیا ہے کہ جھڑپوں کی وجہ سے 500 سے زیادہ خاندان اپنے گھر بار چھوڑ کر کیمپ چھوڑ گئے ہیں۔

ہلال احمر نے مزید کہا کہ تباہی کی وجہ سے سڑکیں بند ہونے کی وجہ سے کیمپ کے اندر جانے میں مشکلات کا سامنا ہے۔ یہ بیان اس وقت سامنے آیا ہے جب فلسطینی اتھارٹی نے اسرائیل پر سینکڑوں خاندانوں کو جنین کیمپ چھوڑنے پر مجبور کرنے کا الزام لگایا ہے۔

تل ابیب نے پیر کو اسرائیلی وزیر اعظم کے دفتر کے ایک بیان کے ذریعہ تصدیق کی ہے کہ تمام تر ثالثی کے باوجود آپریشن جاری ہے اور کسی ٹائم ٹیبل کے ذریعے طے نہیں کیا گیا ہے۔ انہوں نے واضح کیا کہ اسرائیلی فوج دوسرا مرحلہ شروع کرنے کی تیاری کر رہی ہے۔

بیان میں یہ بھی کہا گیا کہ کیمپ کے اندر دھماکہ خیز آلات کی وجہ سے دھماکوں کی آوازیں سنائی دی ہیں۔ کیمپ میں کئی مقامات پر جھڑپوں کے دوران آوازیں سنائی دی ہیں۔

جنین کے کیمپ پر صہیونی فورسز کے حملے کے بعد مغربی کنارے میں مظاہروں کی کال دے دی گئی ہے۔ اسرائیل نے اعلان کیا ہے کہ کیمپ پر حملے کے دوران فضائیہ بھی فورسز کی مدد کر رہی ہے۔ واضح رہے اسرائیل نے جنین کیمپ کے اندر اور مضافات میں متعدد مقامات کو میزائلوں اور ڈرونز سے نشانہ بنایا ہے۔

بمباری کے بعد اسرائیلی فوج نے بکتر بند فوجی بلڈوزروں کے ساتھ جنین شہر پر کئی اطرف سے حملہ کردیا۔ جنین کیمپ کا محاصرہ کرلیا اور شہر اور کیمپ کو ملانے والی سڑکوں کو کاٹ دیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں