لبنان اور اسرائیل کی سرحدوں پر فائرنگ سے حزب اللہ کے 3 ارکان زخمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

بدھ کے روز حزب اللہ کے ارکان کے ایک گروپ نے اسرائیل کے ساتھ لبنان کی جنوبی سرحد پر آگ لگا دی اور بارودی سرنگوں کو دھماکے سے اڑا دیا، اسرائیلی پبلک ریڈیو "کان" کے مطابق واقعہ کے دوران اسرائیلی فورسز نے انتباہی طور پر فائرنگ کی۔

رائٹرز کے مطابق فائرنگ سے حزب اللہ کے 3 ارکان زخمی ہوگئے۔ لبنانی فوج اور UNIFIL فورسز نے شہریوں کو خاردار تاروں کی باڑ کے قریب جانے سے روک دیا۔

یونیفیل کے میڈیا آفس کی ڈپٹی ڈائریکٹر کانڈیس آرڈیل نے ایک بیان میں کہا کہ اقوام متحدہ کا امن مشن بلیو لائن کے ساتھ پیش آنے والے واقعہ کی پریشان کن رپورٹوں سے آگاہ ہے اور صورتحال پر نظر رکھے ہوئے ہے۔ آرڈیل نے مزید کہا کہ صورتحال اب بہت حساس ہے اور ہم ہر ایک سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ کسی بھی ایسی کارروائی کو روکیں جو کسی بھی قسم کے اضافے کا باعث بن سکے۔

اسرائیلی فوج نے ایک بیان میں کہا ہے کہ متعدد مشتبہ افراد لبنان کی سرحد پر حفاظتی باڑ کے قریب پہنچے اور سکیورٹی رکاوٹ والے علاقے پر حملہ کرنے کی کوشش کی۔ فوجی دستوں نے انہیں براہ راست دیکھا اور انہیں دور دھکیلنے کے لیے ذرائع کا استعمال کیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ مشتبہ افراد کی شناخت معلوم نہیں ہے۔ فوج اسرائیل کی خودمختاری اور حفاظتی باڑ کی کسی بھی خلاف ورزی کو روکنے کے لیے کام جاری رکھے گی۔اسرائیلی فوج کے بیان میں کہا گیا اس دوران جو ذرائع استعمال کئے گئے وہ ہلاکت خیز نہیں تھے۔

خیال رہے چند روز قبل اسرائیلی فوج کے ترجمان نے اعلان کیا تھا کہ لبنانی سرزمین سے ایک راکٹ داغا گیا تھا جو سرحد کے قریب اسرائیلی حدود میں پھٹ گیا تھا۔ اسرائیلی فوج نے جوابی کارروائی کرتے ہوئے لبنان کے اندر لانچ ایریا پر حملہ کردیا تھا۔ ’’العربیہ‘‘ کے نمائندے کے مطابق اسرائیلی بمباری نے جنوبی لبنان میں کفر شوبا کے اطراف کے علاقے میں 20 سے زیادہ گولیاں برسائی ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں