سعودی عرب: ڈیوٹی کے دوران منشیات کے استعمال پر قید کی سزا مقرر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب نے مملکت میں ڈیوٹی کے دوران منشیات کے استعمال پرنیا قانون منظور کیا ہے جس کے تحت کام کے دوران منشیات استعمال کرنے پر قید کی سزا مقرر کی گئی ہے۔

سعودی عرب کے پبلک پراسیکیوشن نے اس بات کی تصدیق کی ہے کہ ڈیوٹی کےدوران کوئی ملازم منشیات کا استعمال کرتا ہے جس کے نتیجے میں اس کی دماغی صلاحیت متاثر ہو۔ ایسے شخص کو کم سے کم چھ ماہ اور زیادہ سے زیادہ دو سال قید کی سزا دی جائےگی۔

تفصیل کے مطابق انسداد منشیات کے قانون کے آرٹیکل 41 کے مطابق جو بھی اس قانون کے آرٹیکل 37 اور 38 میں درج مجرمانہ فعل میں سے کسی ایک کا ارتکاب کرے گا، اسے کم از کم چھ ماہ کی قید کی سزا دی جائے گی۔ جرم کی نوعیت اور اس کی شدت کی وجہ سے سزا کا عرصہ بڑھا دیا جائے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں