مصرمیں میڈیکل کے طلبا کے فیل ہونے کا تیسرا واقعہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

مصرمیں اپنی تاریخ میں پہلی بار ایک میڈیکل کالج نے اپنے سال اول کے 60 فی صد طلباء کے فیل ہونے کا انکشاف کیا ہے۔ مصر میں یہ اپنی نوعیت کا چند سال میں تیسرا واقعہ ہے جس میں میڈیکل کے شعبے کے بیشتر طلبا فیل ہوگئے۔

ڈاکٹر علاء عطیہ جو اسیوط کالج میں ڈین فیکلٹی آف میڈیسن ہیں نے انکشاف کیا کہ فیکلٹی میں پہلے سال کے 60 فی صد طلباء امتحانات میں ناکام ہوئے۔ فیکلٹی میں داخلہ لینے والے طلباء کی تعداد تقریباً 1207 ہے۔

انہوں نے وضاحت کی کہ فیل ہونے والے طلباء کی بڑی تعداد بیرون ملک سے آئی تھی۔ بیرون ملک سے آئے طلبا کی تعداد 339 تھی۔ باقی طلبا سوہاج، اسیوط، قنا اور کچھ دیگر گورنریوں سے تعلق رکھتے ہیں۔

گذشتہ سال مصر میں مواصلاتی سائٹس نے ملک کے جنوب میں واقع سہاج یونیورسٹی کی فیکلٹی آف میڈیسن میں پہلے سال میں 229 طلباء کے ناکام ہونے کی وجہ سے سنسنی خیز خبر دی تھی۔

کالج کے پہلے سال میں 671 طلباء میں سے 229 کے ناکام ہونے کی خبر پر عوامی حلقوں کی طرف سے سخت تنقید کی گئی تھی۔

چند برس قبل مصرمیں منصورہ یونیورسٹی کی فیکلٹی آف میڈیسن میں 1,200 طلباء سرجری کے مضمون میں صفر پرفیل ہوئے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں