مقبوضہ مغربی کنارے میں فلسطینی کی کار پر قائرنگ، 3 اسرائیلی زخمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اسرائیلی حکام نے بتایا ہے کہ اتوار کے روز ایک فلسطینی نے مقبوضہ مغربی کنارے میں ایک کار پر فائرنگ کر دی اور فرار ہوگیا۔ فائرنگ کی زد میں آکر دو لڑکیوں سمیت 3 اسرائیلی زخمی ہو گئے۔

حالیہ عرصہ میں مغربی کنارے میں کشیدگی بڑھ گئی ہے۔ خونریزی کی لہر کے دوران یہ حالیہ کارروائی میں سامنے آئی ہے۔ حالیہ تشدد کی لہر کو دو دہائیوں میں اسرائیل اور فلسطینی دھڑوں کے درمیان ایک بدترین لڑائی قرار دیا جا رہا ہے۔

اسرائیلی فوج کا کہنا ہے کہ مسلح شخص نے گزرنے والی گاڑی سے گاڑی پر فائرنگ کی۔ اسرائیل کی ریسکیو سروس ایم ڈی اے نے بتایا کہ 3 اسرائیلی زخمی ہوئے جن میں ایک 35 سالہ شخص بھی شامل ہے جسے گولی لگی۔ اس کی حالت سنگین ہے تاہم خطرے سے باہر ہے۔ باقی 9 اور 14 سال کی دو لڑکیاں ہیں۔ انہیں اڑتے ہوئے ملبے کے ٹکڑے لگے اور یہ معمولی زخمی ہوئیں۔ فوج نے کہا کہ فورسز حملہ آور کی تلاش میں ہیں۔

مقبوضہ مغربی کنارے میں اسرائیل اور فلسطینیوں کے درمیان لڑائی پچھلے سال کے اوائل میں اس وقت شدت اختیار کر گئی جب اسرائیل نے اسرائیلیوں کے خلاف فلسطینیوں کے حملوں کے جواب میں مغربی کنارے کے فلسطینی علاقوں میں رات کے وقت چھاپے مارنے شروع کردئیے۔

ایسوسی ایٹڈ پریس کے ایک جائزے کے مطابق اس سال تشدد میں اضافہ ہوا ہے۔ 2023 کے آغاز سے مغربی کنارے اور مشرقی یروشلم میں اسرائیلی فائرنگ سے 150 سے زیادہ فلسطینی ہلاک ہو چکے ہیں۔ اس دوران اسرائیلیوں کے خلاف فلسطینیوں کے حملوں میں کم از کم 26 افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں