کویت غیر ملکی کمپنیوں کو مقامی ایجنٹ کے بغیر کام کرنے کی اجازت دینے کا خواہاں

غیر ملکی کمپنیوں کو شاخیں کھولنے کی اجازت دینے والی قانون سازی میں ترمیم کی کوشش کی جارہی ہے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

کویتی قومی اسمبلی ایک قانون سازی میں ترمیم کرنے کی کوشش کر رہی ہے جس سے غیر ملکی کمپنیوں کو کویت میں شاخیں کھولنے اور مقامی ایجنٹ کے بغیر اپنی سرگرمیاں براہ راست انجام دینے کی اجازت دی جائے۔ ان سرگرمیوں میں سرکاری ٹینڈرز کے مقابلے میں حصہ لینا بھی شامل ہے۔

قومی اسمبلی میں مالیاتی اور اقتصادی امور کی کمیٹی کے نمائندے عبدالوہاب العیسیٰ نے کہا کہ کمیٹی نے آج اتوار کو ایک مسودہ قانون کی منظوری دی ہے جو ملک میں کام کرنے کے لیے غیر ملکی کمپنیوں کے لیے مقامی ایجنٹ کی ضرورت کو ختم کرتا ہے۔ یہ آزاد معیشت اور تجارتی آزادی کے اصولوں کی فتح ہے۔

العیسیٰ نے ایک پریس بیان میں مزید کہا کہ قانون سازی ترمیم کا مقصد کمپنیوں کے درمیان مسابقت کا دروازہ کھولنا ہے جس سے عوام کو فراہم کی جانے والی خدمات کے معیار کو بہتر بنانے اور قیمتیں کم کرنے میں بھی مدد ملے گی۔

موجودہ تجارتی قانون کے مطابق کسی غیر ملکی کمپنی کے لیے کویت میں برانچ قائم کرنا درست ہے نہ ہی مقامی ایجنٹ کے علاوہ تجارتی کاروبار کرنا۔

کچھ سالوں میں "مقامی ایجنٹ" کے اصول پر تنقید میں اضافہ ہوا ہے۔ خاص طور پر حزب اختلاف کے ارکان پارلیمنٹ نے تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس حالت کی وجہ سے ناقص سروسز پیش کی جارہی ہیں اور کچھ مقامی ایجنٹ ناجائز منافع کما رہے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں