سعودی عرب میں کھجورکی سالانہ پیداوار16لاکھ ٹن،برآمدات کاحجم 1.28ارب ریال سےتجاوزکرگیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب میں پیدا ہونے والی کھجور نہ صرف دنیا کی بہترین کھجور ہے بلکہ مملکت میں کئی اقسام کی کھجوروں کی وافر مقدار کاشت کی جاتی ہے۔

سعودی عرب کے محکمہ ماحولیات کی طرف سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ مملکت میں سالانہ 16 لاکھ ٹن سے زائد کھجور کاشت کی جاتی ہیں جن کی برآمدات سے ایک کھرب 28ارب ریال کا زرمبادلہ حاصل ہوتا ہے۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ مملکت نے سال 2022ء کےدوران کھجور اور ان کی مصنوعات کی برآمدات میں اضافہ حاصل کیا ہے۔ اس طرح سعودی عرب میں کھجوروں کی کاشت میں تین لاکھ اکیس ہزار ٹن اضافہ ہوا جس سے مجموعی طور پر 1.28 ارب ریال کا زرمبادلہ حاصل ہوا۔ 2021ء کے مقابلے میں سعودی عرب میں کھجور کی کاشت میں 5.4 فی صد اضافہ ہوا جب کہ سال 2016ء کے مقابلے میں 121 فی صد اضافہ ہوا۔ سنہ 2016ء میں کھجور کی برآمدی قیمت 579 ملین ریال تھی اور اس وقت مملک میں کھجور کی پیداوار ایک لاکھ 34 ہزار ٹن تھی۔ 2023ء کی پہلی سہ ماہی کے دوران کھجور کی برآمدات میں اضافہ دیکھا گیا۔

ماحولیات پانی اور زراعت کی وزارت نے کہا ہے کہ مملکت کھجور کی 300 سے زیادہ اقسام پیدا کرتی ہے، جن میں سب سے مشہور (سکری، الخلاص، عجوہ، الصقعی اور الصفری ہیں۔

وزارت ماحولیات کے مطابق مملکت میں کھجور کے درختوں کی تعداد مملکت کے تمام خطوں میں 34 ملین سے زیادہ ہے۔ قصیم میں 11.2 ملین کھجور کے درخت ہیں۔ مدینہ 8.3 ملین ،ریاض میں 7.7 ملین اور مشرقی خطے میں 4.1 ملین کھجور کے درخت موجود ہیں۔ْ

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں