نابلس میں جھڑپیں، اسرائیلی فوج نے ایک فلسطینی شہید کردیا

نابلس کے مشرق میں جھڑپوں میں اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے 4 فلسطینی زخمی بھی ہوئے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

مقبوضہ مغربی کنازے کے شہر نابلس میں اسرائیلی فوج نے فائرنگ کرکے ایک فلسطینی کو شہید کردیا۔ جمعرات کی صبح فلسطینیوں اور اسرائیلی فوجیوں کے درمیان جھڑپیں شروع ہوگئیں۔ ایک الگ بیان میں فلسطینی ہلال احمر نے کہا کہ نابلس کے مشرقی حصے میں اسرائیلی فوج کے ساتھ جھڑپوں میں کم از کم چار افراد گولیاں لگنے سے زخمی ہوگئے ہیں۔ ان زخمیوں میں سے دو کی حالت تشویشناک ہے۔

بدھ کی شام فلسطینی میڈیا نے رپورٹ کیا کہ اسلامی جہاد موومنٹ کے عسکری ونگ القدس بریگیڈ کے کارکنوں کی اسرائیلی فورسز کے ساتھ پرتشدد جھڑپیں ہوئی ہیں۔ اسرائیلی فورسز نے نے نابلس کے مشرق میں دھاوا بول دیا تھا۔
اس دوران "القدس بریگیڈز" کے جنگجوؤں نے ایک اسرائیلی فوجی گاڑی میں دھماکہ خیز مواد سے دھماکہ کردیا۔

فلسطینی خبر رساں ادارے نے بتایا کہ قبل ازیں اسرائیلی فورسز نے نابلس کے مشرقی علاقے پر دھاوا بولا تھا۔ اس کا مقصد یہودی آباد کاروں کی جانب سے مزار حضرت یوسف علیہ السلام میں داخلے کو محفوظ بنایا جا سکے۔ حضرت یوسف علیہ السلام کے مزار والے اس علاقے میں اکثر و بیشتر فلسطینیوں اور اسرائیلی فوج کے درمیان جھڑپیں ہوتی رہتی ہیں۔ مقبوضہ مغربی کنارے میں گزشتہ 15 ماہ کے دوران تشدد میں اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں