عدالتی ترامیم منظور ہونے سے فوج کی کارکردگی خراب ہوگی: اسرائیلی چیف آف سٹاف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اسرائیلی فوج کے چیف آف سٹاف ہرتسی ھلیوی نے پیش گوئی کردی ہے کہ عدالتی ترامیم کو منظور کرنے سے فوج کی کارکردگی کو نقصان پہنچے گا۔

طاقت کا مظاہرہ

دریں اثنا دسیوں ہزار مظاہرین نے ہفتہ کی رات القدس جانے والی مرکزی شاہراہ پر طاقت کے تازہ ترین مظاہرہ میں مارچ کیا جس کا مقصد وزیر اعظم نیتن یاہو کے نظام انصاف میں اصلاحات کے منصوبے کو روکنا تھا۔ اسرائیل کے 100 سے زیادہ سابق سکیورٹی چیفس نے ایک خط پر دستخط کیے ہیں جس میں اسرائیلی وزیر اعظم سے اس قانون سازی کو روکنے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔

چار دن کا سفر

مظاہرین کی آمد کے ساتھ ہی شہر کا مرکزی دروازہ نیلے اور سفید اسرائیلی جھنڈوں کے سمندر میں تبدیل ہو گیا کیونکہ مظاہرین نے تل ابیب سے اسرائیلی پارلیمنٹ تک 70 کلومیٹر تک پھیلے چار روزہ ٹریک کا آخری مرحلہ مکمل کیا۔

مظاہرین نے پیر کو متوقع ووٹنگ سے قبل کنیسٹ یا پارلیمنٹ کے باہر کیمپ لگانے کا منصوبہ بنایا ہے۔

گرفتاری کی دھمکی

جمعرات کو اسرائیل کے آرمی ریڈیو نے اطلاع دی تھی کہ فوج ایسے ریزرو فوجیوں کو گرفتار کر سکتی ہے جنہوں نے عدالتی اصلاحات کو منظور کرنے کے حکومتی منصوبوں کے خلاف احتجاج میں فوجی خدمات کی تعمیل نہ کرنے کی دھمکی دی تھی۔ وزیر اعظم نیتن یاہو نے ان کے خلاف کریک ڈاؤن کرنے کے عزم کا اظہار کیا تھا۔

ضرورت سے زیادہ طاقتیں

پیر کے روز نیتن یاہو نے کہا تھا کہ حکومت نافرمانی کرنے والے زیزرو فوجیوں کے خلاف کارروائی کرے گی۔ فوجیوں کا اقدام اسرائیل کے دشمنوں کو اس پر حملہ کرنے کی ترغیب دیتا ہے اور جمہوریت کو نقصان پہنچاتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں