ہارٹ پیس میکر سرجری کے بعد اسرائیلی وزیر اعظم کی حالت میں بہتری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اسرائیلی وزیر اعظم نیتن یاھو دل کی دھڑکن منظم کرنے والے آلے ’’ پیس میکر‘‘ لگوانے کی سرجری کے بعد صحت یاب ہیں۔ تل ھشومر کالونی میں شیبا میڈیکل سنٹر نے بتایا کہ کہ رات بھر کی سرجری کے بعد نیتن یاھو کارڈیالوجی ڈیپارٹمنٹ میں طبی نگرانی میں رہیں گے۔

نیتن یاہو کو دل کے پیس میکر کے ہنگامی امپلانٹیشن کے لیے اتوار کی صبح ہسپتال لے جایا گیا۔ ان کے متنازع عدالتی اصلاحات منصوبہ کی بحالی کے بعد اسرائیل میں بڑے پیمانے پر مظاہرے شروع ہیں اور پورا اسرائیل شدید ہنگامہ آرائی میں ڈوب گیا۔

ہسپتال میں داخل ہونے کا اعلان کرتے ہوئے نیتن یاہو کے دفتر نے کہا کہ وہ بے ہوش ہو جائیں گے اور جب نیتن یاھو اس آپریشن سے گزر رہے ہوں گے وزیر انصاف یاریو لیون ان کے لیے کھڑے ہوں گے۔۔ امپلانٹیشن سے پہلے ایک مختصر ویڈیو بیان میں نیتن یاہو نے کہا کہ میں بہترین محسوس کر رہا ہوں اور ہسپتال سے فارغ ہونے کے ساتھ ہی میں نے عدالتی اصلاحات کو آگے بڑھانے کا منصوبہ بنا رکھا ہے۔

نتن یاہو کا یہ اعلان آدھی رات کے بعد جاری کیا گیا۔ یہ ایک ہنگامہ خیز دن کے بعد بھی آیا جس میں عدالتی بحالی کے منصوبے کے خلاف آج تک کا سب سے بڑا احتجاج دیکھا گیا۔

ہفتے کی رات پورے اسرائیل میں لاکھوں افراد سڑکوں پر نکل آئے۔ کہ ہزاروں افراد نے القدس میں مارچ کیا اور پارلیمنٹ کے قریب ڈیرے ڈال دیے۔ عدالتی اصلاحات کے بل پر ووٹنگ کل پیر کو متوقع ہے۔

اسرائیلی رہنما پر مزید دباؤ بڑھاتے ہوئے 100 سے زیادہ ریٹائرڈ سکیورٹی چیفس فوجی ریزرو فوجیوں کی بڑھتی ہوئی صفوں کے حق میں سامنے آئے ہیں۔ ریزرو فوجیوں کا کہنا ہے کہ اگر یہ منصوبہ منظور ہوا تو وہ ڈیوٹی کے لیے رپورٹنگ کرنا چھوڑ دیں گے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں