تخلیقی صلاحیتوں اور اختراعات کی حوصلہ افزائی، سعودی عرب میں ایگری ہیکاتھون کا آغاز

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب میں زرعی شعبہ میں تخلیقی اور اختراعی سرگرمیاں انجام دینے والے نوجوانوں اور اختراع کاروں کی حوصلہ افزائی کے لیے ’’ایگری ٹیک ہیکاتھون‘‘ کا آغاز کردیا گیا۔ ہیکاتھون کا مقصد نوجوانوں کو تخلیقی اور اختراعی بننے کی ترغیب دینا، ڈیجیٹل حل کے پلیٹ فارمز اور ایپلی کیشنز تلاش کرنا ہے۔ یہ ہیکاتھون ویژن 2030 کے اہداف کے مطابق ایک پائیدار زرعی ماحول پیدا کرنے میں معاون ہے۔

وزارت نے کہا کہ ایگریکلچر ہیکاتھون ایک تکنیکی مقابلہ ہے جس کی بنیاد سعودی عرب میں زرعی شعبے کو درپیش چیلنجوں کا حل پیدا کرنا ہے۔ ان اختراعات کو حقیقت پسندانہ منصوبوں میں تبدیل کرنا ہے۔ اس کا مقصد زرعی ترقی کے اہداف کو سپورٹ کرنا، خوراک اور پانی کی حفاظت کو بڑھانا، پیداوار اور معیار میں اضافہ، سپلائی چین آپریشنز کو بہتر بنانا، زرعی شعبے میں جدید ٹیکنالوجی کے استعمال کے چیلنجز سے نمٹنے میں تعاون کرنا ہے۔

انہوں نے مزید کہا "ایگریکلچر ہیکاتھون" کے اہداف یونیورسٹی اور انسٹی ٹیوٹ کے طلبہ اور ان کے فارغ التحصیل افراد کو زراعت کے شعبے میں جدید تکنیکی نظریات کی طرف مائل کرنا۔ کاروباری افراد، زراعت کے شعبے میں دلچسپی رکھنے والے اور ماہرین، پروگرامرز اور نوجوانوں اور ڈویلپرز میں تخلیقی صلاحیتوں کو فروغ دینے حوصلہ افزائی کرنا بھی مقاصد میں شامل ہے۔

ہیکاتھون میں دو ٹریکس میں مختلف چیلنجوں کا حل کرنا ہے۔ پہلا ٹریک زرعی پائیداری اور غذائی تحفظ کی ترقی، ماہی گیری اور کھپت کے انداز کی حوصلہ افزائی، گرین ہاؤسز اور جدید کاشتکاری کی تکنیک، آبی زراعت اور بارش کے پانی کی ذخیرہ اندوزی کے حوالے سے ہے۔

دوسرے ٹریک میں پودوں اور جانوروں کی صحت اور زرعی اجناس اور جانوروں میں بیماریوں کی روک تھام کو مدنظر رکھا گیا ہے۔

وزارت نے کہا کہ ’’ ہیکاتھون‘‘ کے مقابلوں میں حصہ لینے والوں کے لیے انعامات بھی رکھے گئے ہیں۔ نمایاں کارکردگی والے افراد کو 3 لاکھ ریال تک کے مالی انعامات دئیے جائیں گے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں