ترکیہ کے بمباری کے بعد شام میں کردوں کی فائرنگ سے انقرہ کے 5 وفادار مارے گئے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

شام اور عراق میں ترکیہ کے حملوں میں 8 کرد جنگجو مارے جانے کے بعد حلب کے شمال میں کرد فورسز کی فائرنگ سے ترک حامی دھڑوں کے 5 ارکان جاں بحق ہوگئے۔

سیریئن آبزرویٹری فار ہیومن رائٹس نے ہفتہ کو بتایا کہ حلب کے شمال میں فرات شیلڈ کے علاقوں میں ماریا شہر کے قریب کرد فورسز کے ہاتھوں ترک حمایت یافتہ دھڑوں کے پانچ ارکان کو مارا گیا۔ آبزرویٹری نے کہا کہ حملے کے نتیجے میں انقرہ کے حامی "فری نیشنل آرمی" دھڑے کے متعدد ارکان زخمی بھی ہوئے۔

یہ حملہ عراق اور شام میں کرد زیرقیادت گروپوں کے اعلان کے بعد کیا گیا۔ گروپوں نے اعلان کیا تھا کہ ترکیہ کے فضائی حملوں میں ان کے کل آٹھ جنگجو مارے گئے ہیں۔

شمالی عراق کے نیم خودمختار کردستان علاقے میں علاقائی حکومت کی انسداد دہشت گردی سروس نے ایک بیان میں کہا ہے کہ عراق کے کردستان میں سلیمانیہ میں شیربازار کے علاقے میں ترک ڈرون کے حملے میں کردستان ورکرز پارٹی کے چار ارکان ہلاک اور ایک زخمی ہو گیا۔ ڈرون نے رانجینا گاؤں کے قریب کردستان ورکرز پارٹی (پی کے کے) کے جنگجوؤں کو لے جانے والی کار کو نشانہ بنایا۔

جمعہ کو بھی کرد زیرقیادت سیریئن ڈیموکریٹک فورسزنے ایک بیان میں کہا کہ اس کے چار جنگجو عمودا ضلع کے گاؤں خیربیت خوئے پر ترک ڈرون حملے میں مارے گئے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں