سعودی عرب: الاحسا میں گھر میں آگ لگ گئی، 4 بچے جاں بحق

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب کے علاقے الاحسا کے شہر العمران میں ایک دردناک واقعہ پیش آ گیا۔ والدین کی غیر موجودگی میں گھر میں آگ لگ گئی جس میں چار بچوں جاں بحق ہو گئے۔ واقعہ کے بعد سعودی عرب میں غم والم چھا گیا۔

سعودی شہریوں کی بڑی تعداد نے خاندان کی مصیبت کے خوفناک سانحے پر اپنے غم کا اظہار کیا۔ نیشنل جسٹس کلب میں فینسنگ کوچ علی بن ابراہیم العبید کے گھر میں آگ لگی۔ علی بن ابراہیم عبید کے بیٹے 10 سالہ ھبہ، 9 سالہ حسین، 2 سالہ لیان اور ایک سال کا رھف موت کی آغوش میں چلے گئے۔ آگ گراؤنڈ فلور سے شروع ہوئی اور دوسری منزل تک پھیل گئی۔

92
92

بچوں کے والد نے العربیہ ڈاٹ نیٹ کو بتایا کہ آگ پہلی منزل پر بجلی کی خرابی کی وجہ سے لگی اور آگ لگنے سے بچوں کا نیند کے دوران دم گھٹنے لگا۔ اس مصیبت میں بھی خدا کی مرضی ہے اور ہمارے پاس صبر کے سوا کچھ نہیں ہے۔

سعودی فینسنگ فیڈریشن نے "ٹوئٹر" پر اپنے آفیشل اکاؤنٹ کے ذریعے کوچ علی العبید سے تعزیت کا اظہار کیا۔ سماجی رابطوں کی ویب سائٹس کے کارکنوں نے فینسنگ ٹیم کے کوچ سے ان کے چاروں بیٹوں کے انتقال پر دلی تعزیت اور ہمدردی کا اظہار کیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں