الدرّہ فیلڈ کے معاملات کویت کے ساتھ منصوبہ بندی کے مطابق چلیں گے: سربراہ آرامکو

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی آرامکو کے سی ای او نے کہا ہے کہ الدرّہ فیلڈ سے متعلق معاملات کویت کے ساتھ منصوبہ بندی کے مطابق آگے بڑھیں گے۔ دسمبر 2022 میں آرامکو گلف آپریشنز کمپنی اور کویت گلف آئل کمپنی نے دونوں ممالک کے درمیان مشترکہ الدرّہ گیس فیلڈ کو تیار کرنے کے لیے مفاہمت کی ایک یادداشت پر دستخط کیے تھے۔

یادداشت پر دستخط مارچ 2022 میں الدرّہ فیلڈ ڈویلپمنٹ کے منٹس کے نفاذ کے طور پر کئے گئے تھے۔ تاکہ الدرّہ فیلڈ ڈویلپمنٹ پراجیکٹ پر کام براہ راست دوبارہ شروع کیا جائے۔ پروگرام کے نفاذ کے پلان اور ٹائم ٹیبل کے مطابق کام کو تیز کیا جائے گا۔

اس گیس فیلڈ کی ترقی 24 دسمبر 2019 کو سعودی عرب اور کویت کے درمیان ہونے والی مفاہمت کی یادداشت کے نفاذ کے بعد ہوئی ہے۔ الدرّہ گیس فیلڈ دونوں شراکت داروں کے درمیان یکساں طور پر ایک بلین کیوبک فٹ گیس فراہم کرے گا اور اس معاہدے سے دونوں برادر ممالک کو فائدہ ہوگا۔

قابل ذکر ہے ایران اور کویت کے درمیان قدرتی گیس سے مالا مال متنازع سمندری سرحدی علاقے پر برسوں سے مذاکرات ہوتے رہے ہیں اور ان مذاکرات کا کوئی خاطر خواہ نتیجہ نہیں نکل سکا ہے۔ مذاکرات کی بحالی کی حالیہ کوششیں بھی ناکام ہو گئی ہیں۔ ایرانی وزیر تیل نے حال ہی میں کہا ہے کہ تہران کسی معاہدے پر پہنچے بغیر بھی اس میدان میں تلاش جاری رکھ سکتا ہے۔

سعودی عرب اور کویت نے چند روز قبل ایران کے ساتھ الدرّہ گیس فیلڈ کے تنازع کے حوالے سے اس وقت ایک نیا بیان جاری کیا تھا جب کویتی وزیر خارجہ شیخ سالم عبداللہ الجابر الصباح کو تہران کے دورے کی دعوت ملی تھی۔ سعودی عرب اور کویت نے اعلان کیا تھا کہ وہ الدرّہ گیس فیلڈ کے واحد مالک ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں