سعودی عرب: الاحسا میں بچہ تالاب میں ڈوب کر جاں بحق، لاش برآمد

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کے مشرقی علاقے الاحسا گورنری میں 10 سالہ بچہ تالاب میں ڈوب کر جاں بحق ہوگیا۔ شہری دفاع کی ٹیموں نے شہر کے جنوب میں کنگ عبداللہ ہاؤسنگ کمپلیکس سے تعلق رکھنے والے بچے کی لاش چار گھنٹے کی تگ و دو کے بعد نکال لی۔

المناک حادثہ کے باعث سعودی شہریوں کے بڑی تعداد نے دکھ کا اظہار کیا۔ اہل علاقہ کی جانب سے عینی شاہدین کی بیان کردہ تفصیلات کے مطابق 3 بچے ایک ایسی جگہ پر گئے جہاں بارش کا پانی جمع تھا اور دن کے آخری اوقات میں چھپ کر اس میں داخل ہو گئے۔ بچے پانی کے ساتھ کھیل رہے اور اس میں تیر رہے تھے کہ ڈوبنے لگے۔

دو بچے زندہ بچنے میں کامیاب ہوگئے اور تیسرا اس وقت تک ڈوب گیا جب وہ 3 میٹر گہرے پانی میں نظروں سے اوجھل ہوگیا۔ تالاب کیچڑ والے فرش اور گھاس سے بھرا ہونے کی وجہ سے بچے کو تلاش کرنے میں شدید مشکل پیش آئی۔

فوری طور پر سول ڈیفنس کی ٹیمیں جائے وقوع پر پہنچیں۔ خصوصی غوطہ خوروں کے ایک گروپ نے سرچ آپریشن شروع کردیا جو 4 گھنٹے سے زیادہ دیر تک جاری رہا اور بچے کی لاش نکال لی گئی۔

سعودی سول ڈیفنس اکاؤنٹ نے پلیٹ فارم ’’ ایکس‘‘ جو پہلے ٹویٹر ہوتا تھا کے ذریعہ بتایا کہ الاحساء میں سول ڈیفنس نے بارش کا پانی جمع کرنے والی جگہ میں ڈوبنے والے بچے کی لاش کو نکال لیا ہے۔

اس المناک واقعہ کے بعد کنگ عبداللہ ہاؤسنگ محلے کے لوگوں نے بارش کے پانی کو جمع کرنے کی جگہ کے لیے فوری اور مناسب حل تلاش کرنے کی ضرورت کا مطالبہ کردیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں