سعودی عرب: حبونا میں ثقافتی مرکز کی عمارت کے زمین بوس ہونے کی وجہ سامنے آ گئی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کے جنوبی علاقے نجران میں حبونا کی میونسپلٹی نے انکشاف کیا ہے کہ زیر تعمیر عمارت کی چھت گرنے کے بعد اس سے قبل پراجیکٹ کی نگران ٹیم نے اس کا نوٹس لے لیا ہے اور عملدرآمد کرنے والے ٹھیکیدار کو باضابطہ طور پر اس کا نوٹس جاری کیا گیاہے۔

میونسپلٹی نے ’ایکس‘ پلیٹ فارم کے ذریعے ایک سرکاری بیان میں کہا کہ "سوموار کے روز دوپہر 12:30 بجے حبونا گورنری کی میونسپلٹی سے منسلک سول سینٹر بلڈنگ پروجیکٹ کی چھت زمین بوس ہوگئی تھی جس کے نتیجے میں دو مزدور جاں بحق اور متعدد زخمی ہوگئے تھے۔

میونسپلٹی نے وضاحت کی کہ چھت گرنے کا واقعہ اس وقت پیش آیا جب ٹھیکیدار چھت کا مشاہدہ کر رہا تھا۔ اس واقعے کے بعد حادثے کی وجوہات کا پتا چلانے اور رپورٹ تیار کرنے کے لیے ایک تکنیکی ٹیم تشکیل دی تھی۔

قابل ذکر ہے کہ نجران کے علاقے کے گورنر شہزادہ جلوی بن عبدالعزیز بن مساعد نے حبونا گورنری میں زیر تعمیر عمارت کی چھت گرنے کے حادثے کی تحقیقات کے لیے ایک کمیٹی تشکیل دینے کا حکم دیا تھا۔ اس حادثے کے نتیجے میں دو افراد جاں بحق اور منتعدد زخمی ہوگئے تھے۔

شہزادہ جلوی بن عبدالعزیز نے جاں بحق ہونے والوں کے اہل خانہ سے تعزیت اور ہمدردی کا اظہار کرتے ہوئے دعا کی کہ اللہ تعالیٰ انہیں صبر اور تسلی عطا فرمائے اور زخمیوں کو جلد صحت یابی عطا فرمائے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں