سعودی عرب: اپنے مصری باپ کو قتل کرنے والے امریکی کو سزائے موت دیدی گئی

مجرم نے والد کو چہرے پر متعدد مرتبہ مکے مارے اور گلا گھونٹ کر موت کے منہ دھکیل دیا تھا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی وزارت داخلہ نے اپنے والد کو قتل کرنے والے امریکی کی سزائے موت پر عمل درآمد کردیا۔وزارت داخلہ نے کہا کہ امریکی مجرم بیشوئی شریف ناجی نصیف نے اپنے مصری والد کو متعدد بار چہرے پر مکے مارے اور بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنایا اور اپنے ہاتھوں سے کا گلا گھونٹ کر والد کو ابدی نیند سلا دیا۔ قتل کرنے کے بعد اس کی لاش کو مسخ کر ڈالا ۔ اس نے پھر ایک دوسرے شخص کو قتل کرنے کی کوشش بھی کی اور بھنگ اور نشہ آور گولیوں کے استعمال میں ملوث رہا۔

وزارت داخلہ نے کہا کہ سکیورٹی حکام نے مجرم کو گرفتار کیا اور اس سے تفتیش کے نتیجے میں اس پر اپنے جرم کے ارتکاب کا الزام عائد کیا گیا۔ اسے مجاز عدالت میں بھیج دیا گیا جہاں اس پر جرم ثابت ہوگیا۔

بیشوئی شریف ناجی نصیف نے جو کیا وہ ایک حرام فعل اور بہت بڑا جرم تھا۔ خاص طور پر اس نے اپنے والد کو گھناؤنے اور ظلم کے ساتھ قتل کیا تھا۔ اس کا یہ عمل اس کی بدعنوانی اور سنگینی کا ثبوت ہے۔ اس بنا پر اس کو سخت سزا کی ضرورت تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں