امریکا جرمنی کو’ایرو3‘ میزائل سسٹم فروخت کرنے پر رضا مند ہوگیا: اسرائیل ڈیفنس فورسز

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

اسرائیلی وزارت دفاع نے آج (جمعرات کو) کہا ہے کہ امریکا نے 3.5 بلین ڈالر کے معاہدے میں جرمنی کو ایرو-3 میزائل دفاعی نظام فروخت کرنے پر رضامندی ظاہر کی ہے، جو کہ اسرائیل کے لیے سب سے بڑا دفاعی معاہدہ ہوگا۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ اسرائیل اور جرمنی اس منصوبے پر کام شروع کرنے کے لیے 600 ملین ڈالر کی ابتدائی ادائیگی کے ساتھ کمٹمنٹ کی دستاویز پر دستخط کریں گے۔ یہ مکمل معاہدہ 2023 کے آخر تک مکمل ہوجائے گا۔

امریکا اسرائیل کے ’ایرو‘ منصوبے میں شراکت دار ہے، جسے اسرائیل میزائل ڈیفنس آرگنائزیشن اور امریکی میزائل ڈیفنس ایجنسی نے مشترکہ طور پر تیار کیا ہے۔

’ایرو-3‘ ایک الگ کرنے کے قابل کولیمیٹر وار ہیڈ سے لیس ہے اور اسے زمین کی فضا سے باہر بیلسٹک میزائلوں کو روکنے کے لیے ڈیزائن کیا گیا ہے۔

جرمنی نے اشارہ کیا ہے کہ اسے توقع ہے کہ اس کی فضائیہ کو 2025 کی چوتھی سہ ماہی تک ایرو-3 کی کھیپ موصول ہو جائے گی۔

اسرائیلی آرمی ریڈیو نے کہا کہ جرمنی کے ساتھ ’ایرو-3‘ معاہدے کے حوالے سے دستخطی تقریب نومبر میں متوقع ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں