ایران نے کہا ہے کہ امریکی قیدیوں کے تبادلے کے عمل میں دو ماہ لگیں گے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

ایران کی وزارتِ خارجہ کے ترجمان ناصر کنانی نے پیر کے روز ایک پریس کانفرنس کے دوران کہا کہ ایران میں قید امریکی قیدیوں کی رہائی کے عمل میں دو ماہ لگیں گے۔

کنانی نے کہا، "متعلقہ حکام کی طرف سے ایک مخصوص ٹائم فریم کا اعلان کیا گیا ہے اور اس عمل کو مکمل ہونے میں زیادہ سے زیادہ دو مہینے لگیں گے۔"

اس ماہ کے شروع میں تہران اور واشنگٹن نے ایک معاہدہ کیا تھا جس کے تحت ایران میں قید پانچ امریکی شہریوں کو رہا کیا جائے گا جبکہ جنوبی کوریا میں منجمد ایرانی اثاثوں میں سے 6 ارب ڈالر جاری کر دیئے جائیں گا۔

جنوبی کوریا کے ذرائع ابلاغ نے پیر کے روز رپورٹ کیا کہ جو ایرانی اثاثے جنوبی کوریا میں منجمد کر دیے گئے تھے، وہ ایران منتقلی کی غرض سے گذشتہ ہفتے سوئٹزرلینڈ کے مرکزی بینک کو تبادلے کے لیے منتقل کردیئے گئے۔

ایران نے کہا کہ واشنگٹن امریکی جیلوں سے کچھ ایرانیوں کو بھی رہا کرے گا۔

ایک قیدی کے وکیل نے بتایا کہ ایران نے چار زیرِ حراست امریکی شہریوں کو تہران کی ایون جیل سے گھر میں نظربند رہنے کی اجازت دی۔ پانچواں قیدی پہلے ہی گھر میں قید تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں