سعودی خواتین نے ماحولیاتی معائنہ میں اپنی موجودگی درج کرائی

اس کی شرکت کی شرح گزشتہ سال کے مقابلے میں 360 فیصد سے زیادہ بڑھی ہے۔

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی خواتین نے اس سال ماحولیاتی معائنہ میں اپنی مہارت کا ثبوت پیش کردیا۔ اس سال خواتین کی ماحولیاتی سرگرمیوں میں شرکت کی شرح گزشتہ سال کے مقابلے میں 360 فیصد سے زیادہ بڑھ گئی۔ دوسری طرف مرد معائنہ کاروں کی شرکت کی شرح میں 10 فیصد اضافہ ہوا ہے۔

نیشنل سینٹر فار انوائرمینٹل کمپلائنس مانیٹرنگ نے نشاندہی کی کہ ماحولیاتی انسپکٹرز کی کل تعداد 263 تک پہنچ گئی ہے۔ خواتین انسپکٹرز کی تعداد چار گنا بڑھ کر 111 ہو گئی۔

مرکز نے سہولیات کے معائنہ کے دوروں کے دوران ماحولیات کے نظام کے معیارات اور شرائط کو لاگو کرنے میں خواتین انسپکٹرز کی اعلی کارکردگی کو سراہا اور بتایا کہ خواتین کی جانب سے معائنہ کے لیے 22 ہزار دورے کئے گئے ہیں۔

مرکز نے اس بات پر زور دیا کہ خواتین ماحولیاتی انسپکٹرز کی تعداد میں اضافہ مملکت کے ویژن 2030 کے اہداف کی کامیابی کے طور پر سامنے آیا ہے۔ ان اہداف میں خواتین کو بااختیار بنانا شامل ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں