شرق اوسط میں پہلی مرتبہ: ۔سعودی عرب میں بذریعہ روبوٹ دماغ میں چپ لگا دی گئی

کنگ فیصل سپیشلسٹ ہسپتال اینڈ ریسرچ سنٹر خصوصی صحت کی دیکھ بھال کے حوالے سے دنیا میں نمایاں ترین ہے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

جدہ میں کنگ فیصل سپیشلسٹ ہسپتال اور ریسرچ سنٹر نے ایک روبوٹ کا استعمال کرتے ہوئے مرگی کے ایک مریض کے دماغ کے اندر ای ای جی چپس لگانے میں کامیاب حاصل کرلی۔ مریض کو لاحق مرگی کا مرض روایتی علاج سے ختم نہیں ہو رہا تھا۔ دماغ میں مرگی کے مرکز کے علاقوں کی نشاندہی کرنے کے مقصد کے لیے ای ای جی چپ لگائی گئی جسے بعد میں ہٹا دیا جائے گا۔ یہ ایک جدید طبی طریقہ کار ہے جس کا استعمال مشرق وسطیٰ میں پہلی مرتبہ کیا گیا۔

روبوٹ ٹیکنالوجی کم سے کم جراحی مداخلت پر انحصار کرتی ہے۔ اس ٹیکنالوجی کے ذریعہ کھوپڑی میں 2 ملی میٹر سے زیادہ نہ بڑھنے والے متعدد سوراخ بنا کر الیکٹرو اینسفالوگرافی چپس دماغ میں لگائی جاتی ہیں۔ اس کا مقصد سر کے اندر سے برقی سرگرمی کی پیمائش کرنا اور مرگی کی پیدا ہونے کے مقامات کی تشخیص کرنا ہوتا ہے۔ روبوٹ ٹیکنالوجی ضروری پیمائشوں کا حساب لگانے اور سوراخ کرنے کے لیے صحیح جگہوں کا تعین کرنے میں روایتی "لیکسیل فریم" طریقہ سے بہتر ثابت ہوئی ہے۔ روایتی طریقہ میں وقت بھی زیادہ لگتا اور محنت بھی دوگنا ہوجاتی ہے۔

مرگی کی سرجری میں روبوٹ کا استعمال مرگی کے مرکز کے مقامات کا تعین کرنے میں انتہائی درستی اور طبی طریقہ کار کی مختصر مدت کی وجہ سے ہوتا ہے۔ روبوٹ کا استعمال صرف دماغ میں سلائسس لگانے تک ہی محدود نہیں بلکہ اعصابی امراض سے متعلق متعدد دیگر سرجریوں میں بھی روبوٹ کا استعمال کیا جارہا ہے۔

خیال رہے روبوٹک سرجری دنیا کے معروف طبی مراکز میں ایک حالیہ طبی رجحان ہے۔ اس سے ڈاکٹروں کو زیادہ درستی، لچک اور کنٹرول کے ساتھ بہت سے پیچیدہ آپریشن کرنے کی سہولت مل گئی ہے۔

یہ کامیابی تمام صلاحیتوں کو بروئے کار لانے کی خصوصی کوششوں کے نتیجے میں حاصل ہوئی ہے۔ اسی طرح یہ کامیابی مریض کے تجربے اور آپریٹنگ کارکردگی کو بہتر بنانے کے لیے جدید ترین ٹیکنالوجیز کو استعماال کرنے کی کوششوں کے مرہون منت ہے۔

نیورو سائنسز کا شعبہ جدید ترین تشخیصی تکنیکوں اور جراحی کے اختیارات کا استعمال کرتے ہوئے پیچیدہ اور ریفریکٹری مرگی والے بالغ اور بچوں کے مریضوں کے لیے اعلیٰ معیار کی دیکھ بھال فراہم کرتا ہے۔ مرکز نے حال ہی میں اس حوالے سے مشرق وسطیٰ میں پہلی کامیابی حاصل کی ہے جب انہوں ایک ایسے بچے کے دماغ کے اندر الیکٹرو اینسفیلوگرافی چپس لگانے میں کامیابی حاصل کرلی۔ اس بچے کی عمر گیارہویں سال سے زیادہ نہیں تھی اور یہ ضدی مرگی میں مبتلا تھا۔

کنگ فیصل سپیشلسٹ ہسپتال اینڈ ریسرچ سنٹر کو خصوصی صحت کی دیکھ بھال کے حوالے سے دنیا کے نمایاں ترین ہسپتالوں میں گنا جاتا ہے۔ اس نے حال ہی میں سال 2023 کے لیے دنیا کے بہترین صحت کی دیکھ بھال کرنے والے اداروں کی فہرست میں 20 ویں نمبر پر جگہ بنائی تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں