لبنان:اسرائیل کے لیے جاسوسی کے الزام میں روسی شہری گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

لبنان میں حکام نے ایک روسی شہری کو گرفتار کیا ہے۔اس پر ایران کی حمایت یافتہ حزب اللہ کی اسرائیل کے لیے جاسوسی کرنے کا الزام ہے۔

حزب اللہ نے لبنانی سکیورٹی فورسزکوبتایا تھا کہ ایک روسی شہری کو اسرائیلیوں نے بیروت کے جنوبی مضافات اور جنوبی لبنان میں واقع اس کے ہیڈکوارٹرز کی جاسوسی کے لیے بھرتی کیا ہے۔

سکیورٹی فورسز نے اسے قریباً دو ہفتے قبل بیروت ہوائی اڈے پر اس وقت گرفتار کیا تھا جب وہ اپنی بیوی اور بچّے کے ساتھ فرار ہونے کی کوشش کر رہا تھا۔

حزب اللہ نے سکیورٹی فورسز کو بتایا تھا کہ مشتبہ شخص نے بیروت کے جنوبی مضافات میں واقع ایک اپارٹمنٹ میں گھسنے کی کوشش کی تھی۔گرفتاری کے بعد جنرل سکیورٹی ڈپارٹمنٹ میں اس روسی سے پوچھ تاچھ کی گئی اور پھر ملٹری پراسیکیوٹرز کے حوالے کیا گیا اور وہی اب تحقیقات کے انچارج ہیں۔

لبنان کی جنرل سکیورٹی ایجنسی کے عبوری سربراہ الیاس البیساری نے بتایا تھا کہ حکام نے بیروت ہوائی اڈے پر دشمن (اسرائیل) سے تعلق رکھنے والے دو افراد کوگرفتار کیا ہے۔انھیں لبنان میں کارروائیاں کرنے کی ذمے داری سونپی گئی تھی۔

انھوں نے حراست میں لیے گئے افراد کی قومیت کے بارے میں تفصیل فراہم کیے بغیر مزید کہا کہ ’’ہم نے ان سے پوچھ تاچھ کی اور انھیں مجاز فوجی عدلیہ کے حوالے کردیا ہے‘‘۔

روس کے سرکاری خبر رساں ادارے ریا نوفوستی کے مطابق ہفتے کے روز بیروت میں روسی سفارت خانے نے کہا تھا کہ وہ ان گرفتاریوں سے آگاہ ہیں اوران کی گرفتاری کے حالات کی تفصیل کو واضح کرنے کے لیے ضروری اقدامات کر رہے ہیں۔

واضح رہے کہ لبنان تکنیکی طور پر اسرائیل کے ساتھ حالتِ جنگ میں ہے اور اپنے شہریوں کو اسرائیل کے ساتھ کسی بھی طرح کا رابطہ رکھنے یا وہاں سفر کرنے سے منع کرتا ہے۔

قبل ازیں سکیورٹی حکام نے اے ایف پی کو بتایا تھا کہ 2019 کے آخر میں لبنان کی معیشت کے تباہ ہونے کے بعد سے اسرائیل کے ساتھ مبیّنہ طور پرتعاون کے الزام میں گرفتار کیے گئے افراد کی تعداد میں نمایاں اضافہ ہوا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں