جبل القارہ الاحساء میں پہاڑ سے گرے نوجوان کی لاش نکال لی گئی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

سعودی عرب میں متعلقہ حکام ایک نوجوان کی لاش نکالنے میں کامیاب ہو گئے جو گذشتہ ہفتے کے روز سے الاحساء کے مشہور پہاڑی سلسلے جبل قاری کی تنگ چٹانوں کے درمیان گرا ہوا تھا۔

حادثے کے روز ہی متعلقہ حکام نے اسے تلاش اور ریسکیو کرنے کی کوششیں شروع کر دی تھیں۔

اور کئی دن کی مسلسل محنت اور مسلسل کوششوں کے بعد آج جمعرات کی دوپہر اسے مردہ حالت میں نکال لیا گیا۔

حادثے کی تفصیلات

العربیہ کے ذرائع کے مطابق 36 سالہ ایمن الاضمخ گذشتہ ہفتہ کی دوپہر کو غروب آفتاب سے پہلے پہاڑ کی چوٹی پر سوشل میڈیا کے لیے ویڈیو بنا رہا تھا جب لاپتہ ہو گیا تھا۔

گرتے ہوئے نوجوان نے مدد کی درخواست کے لیے اپنے ایک رشتہ دار کو فون کیا، مگر پھر اچانک اس سے رابطہ منقطع ہوگیا اور پھر اس کی تلاش شروع ہوئی۔

نوجوان ایمن الضمخ
نوجوان ایمن الضمخ

ریسکیو ٹیمیں

ریسکیو ٹیموں نے گذشتہ اتوار کی سہ پہر اس کی تلاش شروع کی، اور وہ اس کا فون اس پہاڑی شگاف کے نیچے سے تلاش کرنے میں کامیاب ہو گئے، جہاں وہ کھڑا تھا۔

پیر کی شام نوجوان کی موت کی تصدیق ہوگئی جب کہ سول ڈیفنس کی ریسکیو ٹیم کے ایک رکن نے بڑی مشکل سے میت تک پہنچنے میں کامیابی حاصل کی اور جمعرات کی سہ پہر اسے نکال لیا گیا۔

اس سطح پر ورثہ کے ماہر علی الحاجی نے العربیہ کو بتایا کہ میت 10 میٹر نیچے ایک چٹان کی شگاف میں پھنس گئی تھی اور ناہموار جگہ کی وجہ سے نکالنے میں تاخیر ہوئی۔

الحاجی نے یہ بھی بتایا کہ یہ جگہ سیاحوں سے بہت دور ہے، یہ وہ جگہیں ہیں، جن کو صرف ہم ملک کے لوگ جانتے ہیں، اور سیاح اس جگہ پر بہت کم آتے ہیں، اس لیے علاقے میں سیاحت کے حوالے سے کوئی خطرہ نہیں ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں