اسرائیلی فوج نے مغربی کنارے کے جنین کیمپ پر دھاوا بول دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

قابض اسرائیلی فوج نے آج سوموار کے روزفلسطین کے مغربی کنارے میں جینین کیمپ پر دھاوا بول دیا۔

عینی شاہدین نے عرب ورلڈ نیوز ایجنسی کو بتایا کہ خصوصی فورس کی دریافت کے بعد کیمپ میں سائرن بجنے لگے جس کے بعد کئی فوجی گاڑیوں نے کیمپ پر دھاوا بول دیا۔

درجنوں فوجی گاڑیاں جینن شہر میں داخل ہوئیں۔ اس کے کیمپ کے آس پاس مقامات کو بھی گھیرے میں لے لیا گیا تھا۔ عینی شاہدین کے مطابق ایک سے زیادہ مقامات پر گولیوں کی آوازیں سنی گئیں۔

بعد ازاں اسرائیلی فوج کے ترجمان آویچائی ادرعی نے تصدیق کی کہ اسرائیلی فورسز جنین کیمپ کے اندر "فی الحال کام کر رہی ہیں"۔ دریں اثنا فلسطینی خبر رساں ایجنسی نے اطلاع دی ہے کہ اسرائیلی فوج کی بڑی تعداد نے جنین شہر اور اس کے کیمپ پر دھاوا بول دیا ہے۔

اسرائیلی آرمی ریڈیو نے کہا کہ آپریشن کا مقصد مطلوب افراد کو گرفتار کرنا تھا۔

اسلامی جہاد موومنٹ سے وابستہ "جنین بریگیڈ" نے ایک بیان میں اعلان کیا ہے کہ اس کے ارکان نے "کیمپ کے مضافات میں ایک خصوصی فورس کو دیکھا جس پر فائرنگ کی گئی ہے۔

اسرائیلی فورسز نے جنین پر بار بار دھاوا بولا اور 31 جولائی کو اسرائیلی فوج نے جنین میں اسلامی مزاحمت تحریک مزاحمت (حماس) کے ارکان کو گرفتار کیا۔

اسرائیلی فوج نے جولائی کے اوائل میں جنین شہر اور اس کے کیمپ میں بڑے پیمانے پر فوجی آپریشن کیا تھا جس میں 12 فلسطینی شہید اور 200 کے قریب زخمی ہوئے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں