سعودی پرو لیگ نے فٹ بال ٹرانسفر ونڈو کے دوران ریکارڈ 957 ملین ڈالر خرچ کئے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

ڈیلوئٹ کے سپورٹس بزنس گروپ کے مطابق سعودی پرو لیگ (ایس پی ایل) نے 2023 کے سمر ٹرانسفر ونڈو کے دوران 957 ملین ڈالر خرچ کر ڈالے ہیں جن میں 907 ملین ڈالر نیٹ خرچہ بھی ہے۔ مالیاتی مشاورتی فرم کے مطابق ایس پی ایل کا خالص خرچ پریمیئر لیگ کے 1.39 بلین ڈالر کے خالص اخراجات کے بعد دوسرے نمبر پر آتا ہے۔

سعودی پرو لیگ نے عالمی کھیلوں کے میدان میں ایک سنجیدہ مقام اس وقت بنایا جب اس نے اپنے سکواڈ میں دنیا کے کچھ سرکردہ کھلاڑیوں کو بھرتی کرنا شروع کیا۔ ان کھلاڑیوں میں رونالڈو سے لے کر کریم بینزیما اور نیمار تک درجنوں فٹبالرز شامل ہیں جنہوں نے اس سال سعودی پرو لیگ کھیلنے کی پیشکش قبول کی ہے۔ فیفا نے ٹرانسفر ونڈو کی آخری تاریخ 20 ستمبر مقرر کی تھی اور سعودی عرب فٹ بال فیڈریشن نے 7 ستمبر کو اپنے کھلاڑیوں کی رجسٹریشن بند کر دی تھی۔

پریمیئر لیگ کلبوں کو بیرون ملک سے موصول ہونے والی ٹرانسفر فیس 698 ملین ڈالر کا تقریباً نصف سعودی پرو لیگ کلبوں سے آیا۔ 312 ملین ڈالر کی منتقلی کی یہ رسیدیں آٹھ کلبوں کے درمیان مرکوز تھیں جن میں سے چار پریمیر لیگ کے بڑے چھ میں شامل ہیں- یہ چھ ٹیمیں آرسنل، چیلسی، لیورپول، مانچسٹر سٹی، مانچسٹر یونائیٹڈ اور ٹوٹنہم ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں