سعودی عرب: قتل کیس کےمجرم کا قصاص میں سر قلم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب کی وزارت داخلہ نے بتایا ہے کہ قتل کے ایک کیس میں مجرم قرار پانے والے ایک مقامی شخص کو دی گئی سزائے موت پرعمل درآمد کردیا گیا ہے۔

کل سوموار 11 ستمبر کو ملزم کا سرقلم کیا گیا۔

وزارت داخلہ نے بتایا ہے کہ راشد بن احمد بن راشد البوعینین نے عبدالعزیز بن راشد بن البوعینین کو چاقو کے وار کرکے قتل کردیا تھا۔ ملزم کو اس کیس میں گرفتار کرکےاس کے خلاف مقدمہ چلایا گیا۔ جرم ثابت ہونے پر اسےسزائے موت سنائی گئی تھی۔

ملزم کی طرف سے سزائے موت کو اپیل عدالت میں بھی چیلنج کیا تھا تاہم عدالت نے اس کی سزا برقرار رکھی۔ سپریم کورٹ کی طرف سے بھی قصاص میں قتل کی سزا برقرار رکھی جس کے بعد کل سوموار کو راشد بن احمد بن راشد البوعینین کو سعودی عرب کے مشرقی علاقے میں قصاص میں قتل کر دیا گیا۔

وزارت داخلہ نے زور دے کر کہا ہے کہ حکومت جرائم کے خلاف اور انصاف کی فراہمی میں کوئی کوتاہی نہیں برتے گی اور قانون کےنفاذ پر سختی کےساتھ عمل درآمد کیا جائےگا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں