سعودی عرب کے ریڈ سی گلوبل کاامالہ کے لیےفرانس کے ای ڈی ایف اور یواے ای کے ساتھ معاہدہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کے ڈویلپر ریڈ سی گلوبل نے فرانس کے ای ڈی ایف اور متحدہ عرب امارات کے مصدر کے ساتھ 25 سالہ رعایتی معاہدہ کیا ہے تاکہ وہ شمال مغربی ساحل پر اپنی انتہائی پرتعیش سیرگاہ امالہ کے مقام کے لیے خدمات حاصل کر سکے۔

ریڈ سی گلوبل، ای ڈی ایف اور مصدر نے پیر کو ایک مشترکہ بیان میں کہا کہ نئی سہولت سالانہ 410,000 میگاواٹ فی گھنٹہ تک بجلی پیدا کرنے کی صلاحیت رکھتی ہے جو 10000 گھرانوں کو سال بھر کی بجلی فراہم کرنے کے لیے کافی ہے۔

بیان میں مزید کہا گیا کہ اس نظام میں بیٹری کے ذریعے توانائی کو محفوظ کرنے کا حل شامل ہے جو 24 گھنٹے اور پورے ہفتے بجلی کے علاوہ ڈی سیلینیشن پلانٹ اور گندے پانی کو صاف کرنے کا پلانٹ فراہم کرتا ہے۔

امالہ 4,155 مربع کلومیٹر پر محیط ایک انتہائی پرتعیش منصوبہ ہے جس میں ہوٹل، رہائشی املاک، میریناس، اور بحری کلب شامل ہیں۔

ایک بار فعال ہو جانے کے بعد مکمل طور پر شمسی توانائی سے چلنے والے اس سیاحتی مقام سے کاربن کا اخراج صفر ہوگا۔

ریڈ سی گلوبل کی ملکیت مملکت کے خودمختار دولت فنڈ یعنی پبلک انویسٹمنٹ فنڈ (پی آئی ایف) کے پاس ہے۔ اسے 2021 میں دو سرکاری ڈویلپرز ریڈ سی ڈیولپمنٹ کمپنی اور امالہ کو ملا کر بنایا گیا تھا۔

امالہ جیسے منصوبے مملکت کے وژن 2030 کا حصہ ہیں جو دنیا میں خام تیل کے سب سے بڑے برآمد کنندہ کو متنوع بنانے اور تیل کی آمدنی پر انحصار کم کرنے کی کوشش ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں