سعودی عرب اور جاپان آثار قدیمہ کی تلاش کا معاہدہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب کی ثقافتی ورثہ اتھارٹی نے 5 سال کی مدت کے لیے تبوک کے علاقے میں املج گورنری میں الحوارہ کے مقام پر آثار قدیمہ کے سروے اور کھدائی کا کام انجام دینے کے لیے جاپان کی ویسیڈا یونیورسٹی کے ساتھ تعاون کے ایک معاہدے پر دستخط کیے ہیں۔

یہ معاہدہ یونیورسٹی کی ایک سائنسی ٹیم کو سعودی آثار قدیمہ کے سروے اور کھدائی کے کام میں شرکت کی اجازت دیتا ہے،جبکہ جاپانی ٹیم کو جاپانی یونیورسٹیوں، تحقیقی مراکز اور سائنسی اداروں کے طلباء کے ایک گروپ کے ساتھ شرکت کا موقع فراہم کرے گا۔

یہ معاہدہ ثقافتی ورثہ کے مختلف مقامات پر آثار قدیمہ کے سروے اور کھدائی کے کام کو انجام دینے کے لیے مملکت کے اندر اور باہر یونیورسٹیوں اور خصوصی سائنسی مراکز کے تعاون سے قومی اور بین الاقوامی سائنسی شراکت کو بڑھانے کے لیے ہیریٹیج اتھارٹی کی قیادت میں کی گئی مملکت کی عظیم کوششوں کا تسلسل ہے۔

دستخط کی تقریب اتھارٹی کے ہیڈ کوارٹر کنگ عبدالعزیز تاریخی مرکز میں ہوئی اور اس کی نمائندگی اس کے ’سی ای او‘ ڈاکٹر جسربن سلیمان الحرباش نے کی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں