سعودی عرب : عسیر پہاڑوں میں دنیا کے نایاب ترین شیر کی ویڈیو

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

سعودی عرب میں سوشل میڈیا پلیٹ فارمز پر ایک ویڈیو سامنے آیا جس میں جنوبی سعودی عرب کے علاقے عسیر کے تہامہ پہاڑوں میں عربی چیتے کو پہاڑوں پر چڑھتے ہوئے دکھایا گیا ہے۔

اسے دنیا میں شیروں کی نایاب نسل میں سے ایک سمجھا جاتا ہے جس کے معدوم ہونے کا خطرہ ہے۔

عرب چیتا، جو اونچے پہاڑوں پر رہتا ہے، ایک گوشت خور (گوشت کھانے والا) ممالیہ ہے جو بلی کے خاندان سے ہے۔

اس خاص نسل کو اپنے آبائی وطن میں معدوم ہونے کا خطرہ سمجھا جاتا ہے، جس میں آج سعودی عرب، امارات، یمن اور عمان شامل ہیں۔

یہ جانور اپنی شب و روز کی سرگرمیاں اور انسانی موجودگی کے مقامات تک پہنچنے میں انتہائی احتیاط کی وجہ سے پہچانے جاتے ہے۔ یہاں تک کہ دوسرے شیروں کے ساتھ بھی تنہائی میں رہتے ہیں اور ان سے ملاقات نہیں کرتے۔

عربی چیتے کو بہت سی ظاہری خصوصیات کے لیے جانا جاتا ہے، جن میں سب سے اہم یہ ہے کہ اس کا رنگ بہت ہلکا ہوتا ہے، جیسا کہ زرد مائل سنہری رنگ جو عام طور پر دوسرے چیتے کے جسم کے اکثر حصوں پر دھبوں کے درمیان پایا جاتا ہے۔

افریقی ہم منصبوں کے برعکس اس کی آنکھیں نیلی ہوتی ہیں۔ایک بالغ مادہ کا وزن 20 کلو گرام ہوتا ہے، جبکہ ایک بالغ مرد کا وزن تقریباً 30 کلو گرام ہوتا ہے.

مقبول خبریں اہم خبریں