سعودی کوششیں، فلسطینی علاقہ ’’اریحا‘‘ یونیسکو کی عالمی ثقافتی ورثہ کی فہرست میں شامل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

اقوام متحدہ کی ایک کانفرنس میں مقبوضہ مغربی کنارے کے قدیم شہر اریحا کو فلسطینی علاقوں میں عالمی ثقافتی ورثے کی فہرست میں شامل کرنے کے حق میں ووٹ دیا گیا۔ اریحا ان قدیم ترین آباد شہروں میں سے ایک ہے جو مقبوضہ مغربی کنارے میں واقع ہے۔

یہ فیصلہ سعودی دارالحکومت ریاض میں اقوام متحدہ کی تعلیمی، سائنسی اور ثقافتی تنظیم (یونیسکو) کے زیراہتمام اقوام متحدہ کی عالمی ثقافتی ورثہ کمیٹی کے اجلاس میں کیا گیا۔

یاد رہے اسرائیل نے 2019 میں یونیسکو سے علیحدگی اختیار کر لی تھی۔ اس وقت صہیونی ریاست نے یونسیکو پر تعصب برتنے اور مقدس سرزمین سے اس کے تعلق میں کمی آجانے کا الزام لگایا تھا۔

اسرائیل نے 2011 میں یونیسکو کی طرف سے فلسطین کو رکن ریاست کے طور پر شامل کرنے پر بھی اعتراض کیا تھا۔ تاہم اسرائیل عالمی ثقافتی ورثہ کنونشن کا فریق بنا ہوا ہے۔ اریحا کو اپنے تاریخی مقامات اور بحیرہ مردار سے قربت کی وجہ سے فلسطینی علاقوں میں سیاحت کے لیے ایک پُرکشش مقام سمجھا جاتا ہے۔

فلسطینی اتھارٹی نے 2021 میں اریحا پیلس میں آٹھویں صدی سے تعلق رکھنے والے مشرق وسطی کے سب سے بڑے موزیک میں سے ایک کی بڑی تزئین و آرائش کی تھی۔ اریحا ریاض میں منعقد 45 ویں اجلاس میں عالمی ثقافتی ورثہ کی فہرست میں شامل ہونے والا پہلا عرب مقام بن گیا۔

یونیسکو میں فلسطین کے مستقل نمائندے منیر نے اس تاریخی کامیابی پر اپنے فخر کا اظہار کیا اور کہا اس کا سہرا تمام عربوں بالخصوص سعودی عرب کو جاتا ہے۔ سعودی عرب نے سیشن کی میزبانی کے لیے ہر ممکن کوشش کی اور بین الاقوامی پلیٹ فارمز پر فلسطینی کاز کی حمایت میں کوئی کسر نہیں چھوڑی۔

فلسطین میں عالمی ثقافتی ورثہ کے ڈائریکٹر جنرل احمد رجب نے کہا کہ اریحا شہر دنیا کے پہلے اور قدیم ترین سیاسی، سماجی اور انتظامی نظام کی ایک مثال ہے۔ یہ نہ صرف دنیا کا قدیم ترین دیوار والا شہر ہے بلکہ دنیا کا سب سے نچلا قدیم فصیل والا شہر بھی ہے۔

10 سے 25 ستمبر کے درمیان ہونے والے اجلاس میں یونیسکو کی جانب سے اریحا کو اپنی لسٹ میں شامل کرنے کی توقع کی جارہی تھی۔

فلسطین میں آثار قدیمہ کے ماہرین تصدیق کرتے ہیں کہ اریحا میں ’’ تل السلطان‘‘ دنیا کا سب سے قدیم قلعہ بند شہر ہے۔ یہ ایک ایسا مقام ہے جو انسانی تاریخ کی کہانی بیان کرتا ہے۔ یہ تاریخ پتھر کے دور سے شروع ہوتی اور بازنطینی دور تک جاری رہتی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں