اوہ میرےخاندان تم کہاں ہو؟ملبے تلےدبے پیاروں کی لاشیں نکالنےوالی لیبی خاتون کی فریاد

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

لیبیا میں گذشتہ ہفتے آنے والے تباہ کن سیلاب طوفان سے متاثر علاقوں میں ابھی تک گم شدہ افراد کی تلاش جاری ہے۔

اپنے پیاروں کو کھو دینے والے اس وقت شدید صدمےمیں ہیں اور وہ اپنے پیاروں کو کھونےکے بعد ان کی لاشیں تلاش کررہے ہیں۔ اس حوالےسے سوشل میڈیا پر دل دہلا دینے والے مناظر دیکھے جا سکتے ہیں۔

ان ہولناک اور دلسوز مناظرمیں سوشل میڈیا پر پوسٹ ایک ویڈیو میں ایک خاتون کو مہندم مکان کے ملبے تلے تبے افراد کی لاشیں نکالتے دیکھا جا سکتا ہے۔

درنہ شہر میں پیش آنے والے اس تباہ کن حادثے میں خاتون کے خاندان کے بیشتر افراد مکان کے ملبے تلے دب چکے ہیں۔

سوشل میڈیا پر گردش کرنے والی ویڈیو کلپ کے مطابق خاتون منہدم مکان کے ملبے تلے دبے اپنے خاندان کے 7 افراد کی لاشوں کو نکالنے کے لیے ملبہ اور پتھروں کے ڈھیر کو ہٹانے میں ناکامی کی شکایت کرتے ہوئے روتی ہوئی دکھائی دےرہی ہے۔وہ کہہ رہ ہے ’اوہ میرے خاندان، تم کہاں ہو؟ امید کرتی ہوں کہ تباہ شدہ دیواروں کے نیچے سے کسی کی آواز آئے گی۔

عورت یکے بعد دیگرے پتھر ہٹا رہی تھی۔ اس دوران اس نے اپنے خاندان کے ایک فرد کی لاش کو نکال سکی۔ وہ روتے ہوئے کہہ رہی ہے کہ’’کاش میں اس ملبے کو اپنے ہاتھوں سے ہٹاتی، میں صرف ایک لاش نکال سکی‘۔

مشرقی لیبیا کے متعدد شہروں میں آنے والے تباہ کن سیلاب کے بعد اور طوفان جس میں ہزاروں افراد ہلاک اور لاپتہ ہو گئے۔ بہت سے خاندان ابھی تک اپنے پیاروں کو نہ ملنے کی وجہ سے غم اور انتظار کی کیفیت میں ہیں جو منہدم عمارتوں کے نیچے لاپتہ ہو گئے یا سمندر میں بہہ گئے۔ .

دریں اثناء ریسکیو ٹیمیں روزانہ مزید لاشیں نکالنے کا سلسلہ جاری رکھے ہوئے ہیں جب کہ لاپتہ افراد کی حتمی تعداد کا ابھی تک پتہ نہیں چل سکا ہے۔ متعلقہ حکام کو زیادہ تر لاشوں کے گلنے سڑنے اور جینیاتی تجزیہ کرنے والی ٹیموں کی کمی کے باعث متاثرین کی شناخت میں مشکلات کا سامنا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں