رام اللہ کے دورے سے دو طرفہ۰تعلقات مضبوط بنانے کی راہ ہموار ہوگی: سعودی سفیر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

فلسطین میں سعودی عرب کے سفیر نایف السدیری نے العربیہ کو دیے گئے انٹرویو میں کہا ہے کہ ان کا دورہ رام اللہ تعلقات کو مضبوط بنانے اور فلسطین کی خدمت کرنے والی ہر چیز کو عملی جامہ پہنانے کی راہ ہموار کرتا ہے، انہوں نے کہا کہ تمام ملاقاتیں دونوں ممالک کے مفاد میں ہیں۔

منگل کے روز فلسطینی صدر محمود عباس نے مملکت سعودی عرب کےغیر مقیم سفیر نایف بن بندر السدیری کی بہ طور سفیر اسناد وصول کی تھیں۔

فلسطینی صدر محمودعباس نے مغربی کنارے کا دورہ کرنے والے سعودی وفد کا استقبال کیا۔ اس وفد کی سربراہی سعودی عرب کے فلسطین کے لیے سفیر کررہے تھے۔

السدیری کو گذشتہ اگست میں سفیر مقرر کیے جانے کے بعد سے کسی سعودی وفد کا فلسطینی علاقوں کا یہ پہلا دورہ ہے۔

فلسطینی خبر رساں ایجنسی کا کہنا ہے کہ محمود عباس نے رام اللہ شہر میں صدارتی ہیڈکوارٹر میں السدیری کا استقبال کیا اور فلسطین کے ان کے "اہم دورے" کو سراہتے ہوئے سعودی عرب کی فلسطین کےحوالے سے خدمات کوسراہا۔

فلسطین میں سعودی سفیر اور یروشلم میں قونصل جنرل نائف السدیری نے تصدیق کی کہ مملکت ایک فلسطینی ریاست کے قیام کے لیے کام کر رہی ہے جس کا دارالحکومت مشرقی یروشلم ہو۔ فلسطینی وزیر خارجہ ریاض المالکی کے ساتھ صحافیوں سے گفتگو کے دوران انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ مملکت فلسطین کے مسئلے اور بین الاقوامی قانونی جواز کی بنیاد پر اس کے حل میں بڑی دلچسپی رکھتی ہے۔

فلسطینی وزیر خارجہ ریاض المالکی نے تصدیق کی کہ سعودی عرب کے ساتھ تعلقات ایک تاریخی لمحے سے گذر رہے ہیں۔ انہوں نے سعودی سفیر کی رام اللہ آمد پر ان کا خیر مقدم کیا اور کہا کہ یہ قدم دونوں ممالک کے درمیان تعلقات کی مضبوطی کو ظاہر کرتا ہے۔

دوسری جانب فلسطینی وزارت خارجہ کے سیاسی مشیر احمد الدیک نے مشرق وسطیٰ میں قیام امن کے لیے سعودی کردار پر اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے اس بات پر زوردیا سعودی فلسطینی ملاقاتیں بند نہیں ہوئیں۔

اس سے قبل سعودی وفد السدیری کی سربراہی میں مقبوضہ مغربی کنارے پہنچا۔ سفیر السدیری نے "ایکس" (سابقہ ٹویٹر) پر اپنے آفیشل اکاؤنٹ پر ایک ٹویٹ میں کہا کہ "محبوب ریاست فلسطین کی طرف سے سرزمین کنعان کی طرف سے خادم حرمین شریفین اور ولی عہد کو سلام‘‘۔

گذشتہ روز فلسطینی وزارت خارجہ اور تارکین وطن نے سعودی سفیر کے دورے کا خیرمقدم کیا اور اسے دونوں ممالک کے درمیان دوطرفہ تعلقات کو مضبوط اور ترقی دینے اور تمام شعبوں میں مشترکہ تعاون کے لیے مزید افق کھولنے کے لیے ایک "اہم تاریخی سنگ میل" قرار دیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں