اسماعیلیہ میں آتش زدگی میں گھرے شخص کی موبائل ٹارچ جلا کرمدد کی فریاد

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

مصرمیں دو روز قبل اسماعیل شہر میں سکیورٹی ڈاریکٹوریٹ میں لگنے والی آگ کی تفصیلات سامنے آنے کے بعد ایک لرزہ خیز واقعہ بھی سامنے آیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق مصر کے اسماعیلیہ سکیورٹی ڈائریکٹوریٹ کی عمارت میں آگ میں پھنسے لوگوں میں سے ایک نے مدد کے لیے فون کرنے کے لیے اپنے موبائل فون کی ٹارچ کا سہارا لیا۔ اس واقعے کی تفصیلات پڑھ کر رونگٹے کھڑے ہوجاتے ہیں۔

سوشل میڈیا پر گردش کرنے والی ایک ویڈیو میں دکھایا گیا ہے کہ کوئی شخص عمارت کےاندر سے موبائل فون کی لائٹ کو آگ کے اندر سے لہراتا ہے۔

عمارت کے باہر کسی کی آواز سنائی دی جو اس شخص کی طرف اشارہ کر رہا تھا جو اسماعیلیہ سکیورٹی ڈائریکٹوریٹ کی عمارت کی بالکونی میں کھڑا تھا اورسیاہ دھوئیں میں ڈھکا ہوا تھا۔

اسماعیلیہ سکیورٹی ڈائریکٹوریٹ کی عمارت میں کل پیر کو آگ لگنے کا حادثہ پیش آیا جس کے نتیجے میں طبی ذرائع کے مطابق 38 افراد زخمی ہوئے۔

مصری پبلک پراسیکیوٹر کے ایک سرکاری بیان میں اس واقعے کی تفصیلات سامنے آئیں جس کے نتیجے میں سکیورٹی ڈائریکٹوریٹ کی پوری عمارت جل کر خاکستر ہوگئی اور اس کی بالائی منزلوں سے آگ کے شعلے بلند ہوئے۔ انہوں نے مزید کہا کہ مسلح افواج کے طیاروں کی مدد سے فائر فائٹرز اور شہری دفاع کی طرف سے مدد فراہم کی گئی اور متاثرین کو آگ کے اندر سے نکالا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں