میکسیکو کے سابق سفارت کار کی جنسی جرائم کے الزام میں اسرائیل میں گرفتاری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

میکسیکو کے صدر نے پیر کو کہا کہ میکسیکو کے مصنف اور سابق سفارت کار آندریس رومر جنہیں جنسی جرائم کے متعدد الزامات کا سامنا ہے، کو اسرائیل میں گرفتار کر لیا گیا ہے۔

میکسیکو کے صدر آندریس مینوئل لوپیز اوبراڈور نے اپنی صبح کی معمول کی پریس کانفرنس میں کہا کہ رومر کو ملک بدر کر دیا جائے گا۔

رومر کے خلاف الزامات جن کی تعداد کارکنوں کے مطابق تقریباً 60 ہے، فروری 2021 میں اس وقت شروع ہوئے جب میکسیکن رقاصہ اٹزل سناس نے ان پر جنسی زیادتی کا الزام لگایا۔

سان فرانسسکو میں میکسیکو کے 60 سالہ سابق قونصل اور یونیسکو کے خیر سگالی سفیر نے الزام کی پہلے "قطعی طور پر" تردید کی۔

لیکن انہوں نے بڑھتے ہوئے الزامات کے بعد سوشل میڈیا سے کنارہ کشی اختیار کر لی کہ انہوں نے کام کے بہانے خواتین سے ملنے کے بعد ان کو نامناسب طریقے سے چھوا تھا۔

میکسیکو نے جون 2021 میں رومر کی ملک بدری کی درخواست کی تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں