سعودی عرب میں تعمیراتی منصوبوں میں تیزی، سالانہ 175 بلین ڈالر لاگت کا تخمینہ

سیاحت سے متعلق میگا منصوبوں کی وجہ سے معیشت کا انحصار تیل پر نہیں رہے گا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

تعمیراتی شعبے میں تیزی کے پیش نظر امکان ہے کہ سعودی عرب صنعتی اور ترقیاتی شعبوں میں امکانی طور پر 175 بلین ڈالر کی خطیر رقم خرچ کرے گا۔ 2025 سے 2028 کے دوران تعمیراتی سرگرمیاں نقطہ عروج پر ہوں گی۔

میکنزی کمپنی کے مطابق بڑے بڑے ترقیاتی اور تعمیراتی منصوبے میں نئے شہر نیوم پر 1.3 ٹریلین ڈالر خرچ کیے جائیں گے بحر احمر میں مملکت کے ساحل پر 180عرب ڈالر کی لاگت آئے گی۔ 2026 اور 2027 کے درمیان ترقیاتی کاموں کی لاگت سب سے زیادہ توقع کی جا رہی ہے اس امر کا اظہار پیشہ ورانہ مشاورتی کمپنی نے اپنی رپورٹ میں کیا ہے۔

معاشی اور ترقیاتی امور کے ماہر شنکر چندر شینکرن سمیت تجزیہ کاروں نے اپنی رپورٹ میں کہا ہے کہ یہ توقع کی جا رہی ہے کہ اگلے دس برسوں کے درمیان درکار وسائل بہت زیادہ ہوں گے۔

متوقع سالانہ کنٹریکٹ ایوارڈ تاریخی اوسط سے تین گنا زیادہ ہو گا جو 50 بلین ڈالر سے بڑھ کر 150 بلین ڈالر تک ہے

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں