سعودی عرب کے پاس ورلڈ کپ کی میزبانی کی تمام صلاحیتیں موجود ہیں: او آئی سی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کے ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کی جانب سے 2034ء ورلڈ کپ کی میزبانی کی مملکت کی خواہش کے اعلان کے بعد اسلامی تعاون تنظیم [و آئی سی] کے جنرل سیکرٹریٹ نے اس کی مکمل تائید کا اظہار کیا ہے۔

سعودی عرب میں تمام صلاحیتیں موجود ہیں

تنظیم کے سیکرٹری جنرل حسین ابراہیم طحہ نے شہزادہ محمد بن سلمان کے بیان کے مندرجات کی تعریف کرتے ہوئے اس بات پر زور دیا کہ سعودی عرب کے پاس عالمی کپ کا ایک ممتاز اور بے مثال ورژن پیش کرنے کے لیے تمام انسانی، لاجسٹک اور بنیادی ڈھانچے کی صلاحیتیں موجود ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ سعودی عرب محبت، امن اور ہم آہنگی کی سرزمین کے سوا کچھ نہیں ہے اور وہ دنیا کے پہلے مقبول کھیل فٹ بال کی نمائندگی کرنے والے ایونٹ کو دنیا کے لوگوں تک محبت اور امن کے پیغامات پھیلانے کے لیے پوری صلاحیت رکھتا ہے۔

سیکرٹری جنرل نے اپنے بیان میں اسلامی تعاون تنظیم کے رکن ممالک سے مطالبہ کیا کہ وہ یکجہتی کے فریم ورک کے اندر 2034 کے فٹ بال ورلڈ کپ کی میزبانی کے لیے سعودی عرب کی امیدواری کی حمایت کریں اور مشترکہ اسلامی اقدام کو مضبوط بنائیں۔

جامع منصوبہ

یہ بیان بدھ کو سعودی فیڈریشن کے اعلان کے بعد سامنے آیا جس میں سعودی عرب نے کہا ہے کہ وہ 2034ء ورلڈ کپ کی میزبانی کے لیے حصہ لینے کا ارادہ رکھتا ہے۔ سعودی عرب کا کہنا ہے کہ وہ جامع منصوبے کے مطابق فیڈریشن فٹ بال کے شائقین کو خوش کرنے کے لیے ایک شاندار اور بے مثال تجربہ فراہم کرنے کے لیے تمام صلاحیتوں اور توانائیوں کو بروئے کار لانا چاہتی ہے۔

جبکہ ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے اس بات پر زور دیا کہ 2034 ورلڈ کپ کی میزبانی کی خواہش اس بات کی عکاس ہے کہ سعودی عرب نے سب سے بڑے عالمی مقابلوں کی میزبانی کے لیے بین الاقوامی مرکز کے طور پر کیا حاصل کیا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ یہ ایونٹ سعودی عرب میں امن اور محبت کا پیغام عام کرنے کی کوششوں کا حصہ ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں

  • مطالعہ موڈ چلائیں
    100% Font Size