راکٹ حملوں کے بعد جزیرہ النقب میں موسیقی میلہ کیسے خوف کے جھنم میں تبدیل ہوا؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

فلسطین کے علاقے غزہ کی پٹی سے حماس کے کارکنوں نے کل ہفتے کی صبح اسرائیلی بستیوں پر اچانک اندھا دھند راکٹ حملے شروع کیے تو اس وقت جزیرہ نما النقب میں ایک موسیقی میلہ جاری تھا۔ کئی راکٹ اس مقام پربھی گرے۔ اس سے موسیقی میلے میں شریک لوگ خوف کے مارے بھاگ کھڑے ہوئے۔ ذرائع کے مطابق شرکاء کا پتا ہیں۔

راکٹ حملوں کے بعد موسیقی میلہ تتر بتر ہوگیا اور شرکاء میں بھگدڑ مچ گئی جس سے یہ محفل خوف کے جھنم میں بدل گئی۔

موسیقی میلے میں شریک سیکڑوں آباد کاروں نے راکٹ حملوں کے بعد دوڑ لگا دی۔ جشن مناتے آباد کار اپنی گاڑیوں میں چھپنے پر مجبور ہوگئے۔

سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی ایک ویڈیو میں موسیقی میلےمیں بھگدڑ اور لوگوں میں خوف و ہراس پھیلے دیکھا جا سکتا ہے۔

شرکاء نے تصدیق کی کہ وہ میلے کے مقام پر اپنی گاڑیوں کے اندر گھنٹوں چھپے رہے۔

اسرائیلی میڈیا کی رپورٹ کے مطابق جائے وقوعہ پر ہونے والی ہلاکتوں کی صحیح تعداد ابھی تک واضح نہیں ہے۔

اگرچہ جائے وقوعہ سے درجنوں لاشیں منتقل ہوتے دیکھی گئیں۔

500 سے زائد لاپتہ؟!

تاہم گذشتہ چند گھنٹوں کے دوران بہت سے اسرائیلی اپنے لا پتا رشتہ داروں کی تلاش میں ہیں جو غزہ سے راکٹ حملوں کے بعد لا پتا ہیں۔

کل شام درجنوں سوشل میڈیا صارفین نے فیسٹیول میں شرکت کرنے والے پیاروں کی فہرستیں شیئر کیں اور وہ ابھی تک لاپتہ ہیں۔

نیویارک ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق جب کہ فہرستوں میں سے ایک میں 500 سے زائد افراد کے نام شامل تھے جو لاپتہ ہو گئے تھے۔ ان کے اہل خانہ ان کے بارے میں معلومات جمع کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔

حماس کی طرف سے پہلے دیے گئے بیانات کےمطابق یرغمال بنائے گئے اسرائیلیوں کی تعداد اسرائیلی حکومت کی بیان کردہ تعداد سے کہیں زیادہ ہے۔

دریں اثناء اسرائیلی چینل 7 نے اتوار کو اطلاع دی کہ غیر حتمی اندازوں سے ظاہر ہوتا ہے کہ غزہ میں سول اور فوجی دونوں طرح کے 100 قیدی ہیں۔

یروشلم پوسٹ اخبار کی رپورٹ کے مطابق ددیگر تخمینوں سے پتا چلتا ہے اسرائیل کے تقریباً 750 شہری لاپتہ ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں