حزب اللہ سے ممکنہ لڑائی، اسرائیل نے شمالی علاقوں کو خالی کرنے کا بھی منصوبہ بنا لیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

حماس اور اسرائیل کے درمیان تصادم دوسرے روز بھی جاری رہا۔ ٹائمز آف اسرائیل نے رپورٹ کیا ہے کہ اسرائیلی وزیر دفاع یوو گیلانٹ نے لبنان اور شام کے ساتھ شمالی سرحد پر واقع قصبوں کو ممکنہ طور پر خالی کرنے کے منصوبے تیار کرنے کا حکم دے دیا ہے۔ یہ حکم اس محاذ پر جنگ شروع ہونے کے امکان کے پیش نظر دیا گیا ہے۔

اخبار کے مطابق گیلانٹ نے فوجی رہنماؤں اور دیگر حکام کے ساتھ ایک میٹنگ کی ۔ اس اجلاس میں انہوں نے غزہ کی پٹی کے ساتھ سرحد کے قریب واقع قصبوں سے اسرائیلیوں کو نکالنے کی کوششوں پر حکام کی تعریف کی۔ انہوں نے اسرائیل کی شمالی سرحد کے قریب موجود قصبوں کے ممکنہ انخلا کے منصوبے تیار کرنے کا حکم بھی دے دیا۔

وزیر دفاع نے غزہ کی سرحد کے قریب واقع قصبوں میں سکیورٹی ٹیموں کو ہتھیار، گولہ بارود اور دستے فراہم کرنے کا بھی حکم دیا۔ واضح رہے ہفتہ کو حماس کی جانب سے جنگ کے آغاز کے بعد اتوار کو اسرائیلی حکام نے باضابطہ طور پر جنگ کا اعلان کردیا ہے۔

وزیر اعظم نیتن یاہو کے دفتر نے اتوار کو ایک بیان میں تصدیق کی کہ اسرائیل پر مسلط کی گئی جنگ کا آغاز 7 اکتوبر 2023 کو غزہ کی پٹی سے ہونے والے مہلک دہشت گردانہ حملے کی وجہ سے ہوا ہے۔ یاد رہے 6 اکتوبر 1973 کی جنگ کے بعد یہ پہلا موقع ہے جب اسرائیل نے ریاستی جنگ کا اعلان کیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں